- الإعلانات -

الیکشن کمیشن میں عمران خان کے خلاف کارروائی روکنے کا حکم

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کے خلاف عمران خان کی درخواست پر سماعت کی۔

درخواست گزار کی جانب سے بابر اعوان ایڈووکیٹ نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ آئین کے تحت صرف وزیراعظم، وزرائے اعلیٰ اور وزراء سمیت سرکاری عہدہ رکھنے والے انتخابی مہم نہیں چلا سکتے جبکہ الیکشن کمیشن نے تمام ارکان قومی و صوبائی اسمبلیوں پر اپنے حلقوں میں جانے اور انتخابی مہم چلانے کی پابندی عائد کر دی ہے۔

الیکشن کمیشن کے نوٹیفکیشنز آئین کے مختلف آرٹیکلز کی خلاف ورزی ہیں جو صرف عمران خان کو ذہن میں رکھ کر جاری کیے گئے۔

بابر اعوان نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے عمران خان کے خلاف کارروائی شروع کر رکھی ہے، جس کا 8 مئی کو فیصلہ سنانا ہے۔

انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ الیکشن کمیشن کو تحریک انصاف کی لیڈر شپ کے خلاف نوٹس پر کارروائی اور حتمی فیصلہ جاری کرنے سے روکا جائے۔

عدالت نے عمران خان کے خلاف الیکشن کمیشن میں جاری کارروائی پر حکم امتناع جاری کرتے ہوئے سماعت 15 مئی تک ملتوی کر دی۔