- الإعلانات -

سپریم کورٹ نواز شریف سے استعفیٰ دلوائے، عمران خان

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اپیل کی ہے کہ سپریم کورٹ نواز شریف سے استعفیٰ دلوائے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہاکہ نواز شریف کی موجود گی میں جے آئی ٹی آزادانہ کام نہیں کر سکتی۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ جب تک نواز شریف بیٹھے ہوئے ہیں اس وقت تک تفتیش میں رکاوٹیں ڈالی جاتی رہیں گی۔

چیئرمین پی ٹی آئی کا مزید کہنا ہے کہ جے آئی ٹی پر روز حملے کیے جا رہے ہیں اور اس میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے،ان کے پاس کوئی میٹریل ہوتا تو وہ سپریم کورٹ میں آجانا تھا، ان کے پاس کچھ نہیں ہے۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ شیخ رشید کےساتھ جو کچھ کل ہوا اس کی سخت مذمت کرتا ہوں، یہ ن لیگ کی پرانی عادت ہے، انہوں نے ماضی میں نجم سیٹھی اور سرفراز نواز کوبھی مار پڑوائی ۔

انہوں نے بتایا کہ پارٹی کو کال دےدی ہے کہ وہ تیار ہوجائے، ہمیں خدشہ ہے کہ انہوں نے سپریم کورٹ پر کچھ نہ کچھ کرنا ہے۔

عمران خان نے یہ بھی کہا کہ ہم اب سپریم کورٹ کے ساتھ کھڑے ہوں گے، ہم جے آئی ٹی کے نتائج کا انتظار کررہے ہیں،قوم سڑکوں پر آئے گی ۔

انہوں نے کہا کہ میں ن لیگ کے لیے اور نواز شریف کے لیے مزید خطرناک ہونے والا ہوں ، مسلم لیگ ن کے کارکن نہیں ہوتے، ان کی پنجاب پولیس ہوتی ہے۔

عمران خان نے اس موقع پر رکن اسمبلی جمشید دستی کی گرفتاری کی بھی شدید مذمت کی۔