- الإعلانات -

آج کا دن ملک بھر میں یوم سیاہ کے طور پر منایا جائے :بلاول بھٹو

40 سال قبل ایک آمر نے قوم کی امیدوں کو روند ڈالا تھا ، آج قوم جو مصائب جھیل رہی ہے وہ اسی آمر کے اقدامات کی وجہ سے ہیں :چیئرمین پیپلز پارٹی

لاڑکانہ  ملک بھر میں آج کا دن یوم سیاہ کے طور پر منایا جائے ، بلاول بھٹو زرداری کہتے ہیں 5 جولائی 1977 پاکستان کی تاریخ کا سیاہ دن ہے ۔ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نےاپنے بیان میں کہا کہ چالیس سال قبل آج کے دن ایک آمر نے قوم کی امیدوں اور توقعات کو روند ڈالا تھا ، وہ آمر ان تمام مصائب کی بنیاد ہے جن سے آج تک عوام نبرد آزما ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انتہا پسندی ، دہشتگردی ، کلاشنکوف اور ڈرگ کلچر ضیاء کی آمریت کا تحفہ ہیں ، 1977

میں جمہوریت کے خاتمے کے بعد نہتے پاکستانیوں پر بربریت کے پہاڑ گرائے گئے ۔ بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ انتقامی کارروائیوں اور ریاستی دہشتگردی کا سامنا کرنے کے باوجود عوام ثابت قدم رہے اور جانفشانی سے جمہوریت کی جنگ لڑی ۔ کراچی کی مقامی عدالت نے لائوڈ سپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی کیس میں عدم حاضری پر فاروق ستار ، حیدرعباس رضوی ، فیصل سبزواری ، کنور نوید و دیگر کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ۔

جوڈیشل مجسٹریٹ شرقی کی عدالت میں ایم کیو ایم رہنماؤں کے خلاف لائوڈ سپیکرایکٹ کی خلاف ورزی کیس کی سماعت ہوئی ۔ سماعت کیس کی منتقلی کے باعث ملتوی کردی گئی ۔ مزید سماعت اب 25 جولائی کو ہوگی ۔ عدالت نے عدم حاضری پر فاروق ستار ، حیدر عباس رضوی ، فیصل سبزواری ، کنور نوید و دیگر کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دئیے ۔ میئر کراچی وسیم اختر کو حاضری سے استثنیٰ حاصل ہے ۔ قائد ایم کیو ایم و دیگر کیخلاف مقدمہ گزشتہ سال تھانہ سولجر بازار میں درج کیا گیا تھا ۔