- الإعلانات -

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی نے روپے کی قدر میں کمی کے معاملے کا نوٹس لے لیا

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ سٹیٹ بنک سے انکوائری رپورٹ طلب کر لی ہے۔

اسلام آباد: قیصر احمد شیخ کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس ہوا۔ اراکین کمیٹی کا کہنا تھا کہ روپے کی قدر میں کمی کی انکوائری کا کیا ہوا ہے، کمیٹی کو معلوم ہونا چاہیے کہ روپے کی قدر میں اچانک کمی کی وجوہات کیا ہیں؟ اسد عمر نے کہا کہ چیئرمین ایس ای سی پی کو معطل کیوں نہیں کیا گیا؟ ان پر کیس سپریم کورٹ کی ہدایت پر ہوا تھا۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ معاملہ عدالت میں ہونے کی وجہ سے کوئی رولنگ نہیں دی جا سکتی۔ اجلاس میں سیال کوٹ چیمبر کے صدر ماجد رضا بھٹہ پھٹ پڑے اور کہا کہ چار سال سے سیالکوٹ چیمبر کو نظر انداز کیا جا رہا ہے۔ چار سال میں وزارت خزانہ کو 122 لیٹر لکھے ایک جواب تک نہ آیا۔ سیالکوٹ چیمبر کے 2012ء کے ری فنڈ نہیں ملے اور مجموعی ری فنڈز 11 ارب روپے کے لگ بھگ ہیں۔ کمیٹی نے میکرو فنانس انسٹی ٹیوشن ترمیمی بل 2017ء منظور کر لیا۔