- الإعلانات -

فوج سے ساز باز کے ذریعے حصولِ اقتدار کی خواہش نہیں: عمران خان

فوج سے ساز باز کر کے اقتدار حاصل کرنے کے الزامات غلط ہیں، نہ پہلے ایسا کیا، نہ آئندہ ایسا کر کے اقتدار کے حصول کی خواہش ہے، عمران خان کا برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو، کہتے ہیں، ایسے مواقع کئی بار آئے جب ملک میں انتشار کا باعث بن سکتا تھا لیکن ‘محض اسی خدشے کے سبب پیچھے ہٹ گیا کہ کہیں فوج نہ آ جائے’۔

لاہور:  چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ وہ پاکستان میں جمہوریت برقرار رکھنے میں سب سے زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں اور جمہوریت کا ان سے بڑا سٹیک ہولڈر پاکستان میں اور کوئی نہیں؟ نواز شریف جنرل جیلانی کے ذریعے سیاست میں آئے اور ذوالفقار علی بھٹو تو  چھوٹے سے تھے جب انھیں ایوب خان اوپر لائے ۔ انہوں نے کہا کہ میں 21 سال جد و جہد کرنے کے بعد اس مقام پر پہنچا ہوں، کیا میں نے 21 سال جد و جہد اس لئے کی کہ فوج کو اقتدار میں لے کر آؤں؟ تحریک انصاف کے پاس جتنی زیادہ  سٹریٹ پاور  ہے، اس کے ذریعے اگر میں چاہوں تو کسی بھی وقت ملک میں انتشار پھیلا سکتا ہوں مگر میں نے ایسا نہیں کیا۔

عمران خان نے مزید کہا کہ پچھلے برس اسلام آباد لاک ڈاؤن کے موقع پر میں نے پارٹی کی مخالفت کے باوجود پشاور سے آنے والی ریلی کو روکا، مجھے پتہ تھا کہ انتشار ہو گا اور بات ہمارے ہاتھ سے نکل جائے گی اور پھر فوج مداخلت کرے گی، یہی وجہ ہے کہ میں نے انہیں واپس بھیجا اور سپریم کورٹ سے رجوع کیا۔