- الإعلانات -

قصور شہر کا قدیمی اور بڑا قبرستان خواجہ دائم الحضوری قبرستان مقامی انتظامیہ کی لاپراہیوں کی وجہ سے قبضہ مافیا کے نرغے میں آ چکا ہے

قصور شہر کا قدیمی اور بڑا قبرستان خواجہ دائم الحضوری قبرستان مقامی انتظامیہ کی لاپراہیوں کی وجہ سے قبضہ مافیا کے نرغے میں آ چکا ہے، قبرستان کی جگہ پر مقامی افراد نے اپنے جانوروں کیلئے باڑے بنا رکھے ہیں،اور دن کے اوقات میں جانوروں کو قبرستان کی زمین پر کھلا چھوڑ دیا جاتا ہے،اور آہستہ آہستہ قبرستان کی جگہ پر اپنا قبضہ بڑھاتے جا رہے ہیں،ایک جانب تو قبضہ مافیا سرگرم عمل ہے جبکہ دوسری جانب قبروں کی کھلے عام بے حرمتی کی جا رہی ہے،جانوروں کی غلاظت قبروں پر اور غلیظ جانوروں نے پرانی قبروں کو کھود کر اپنی اماجگاہیں بنا رکھی ہیں، قصور کے شہریوں نے میڈیا کی ٹیم کا ان شہر خاموشاں میں مدفن افراد کی فریاد ارباب اختیار تک پہنچانے پر شکریہ ادا کیا اور گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج کے نفسا نفسی کے دور میں کوئی اپنوں کیلئے نہیں سوچتا مگر آفرین ہے آپ لوگوں پرجو ان لوگوں کی آوار بن رہے ہیں جن کا آپ سے کوئی رشتہ نہیں پھر بھی آپ نے خاموش لوگوں کی فریاد ارباب اختیار تک پہنچا نے میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں،موجودہ حکمران ملک کی ترقی اور زندہ عوام کی بہتری کیلئے اقدفامات تو کر رہی ہے،مگر اس شہر خاموشاں میں مدفن ان لوگوں کی فریاد جو نہ تو احتجاج کر سکتے ہیں اور نہ ہی بول سکتے ہیں،کون سنے گا،حکومت وقت اورمقامی انتظامیہ کو اس جانب بھی توجہ دینے چاہیے جس سے وہ اپنی عاقبت سنوار سکیں،قصور کی مذہبی تنظیموں نے قبرستان کی بے حرمتی کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اس سارے عمل میں ضلعی انتظامیہ کی نا اہلی قرار دیا ہے،اور کہا ہے کہ اب قبضہ مافیا اس قدر گر چکا ہے کہ وہ اب قبروں کو بھی مسمار کرکے وہاں پر قبضہ کررہا ہے،قبرستانوں میں مدفن یہ لوگ بے بس ہیں، نہ اپنی فریاد کسی کے آگے کر سکتے ہیں اور عظیم ہیں وہ لوگ جو ان کیلئے سوچ رہے ہیں،آج اگر ان مدفن بے بس لوگوں کی فریادارباب اختیار تک پہنچ جائے تو اس کا اجر ذات خدا آپ کو دے گی،