- الإعلانات -

کراچی میں نوجوان نے بچپن کے دوست کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا

شہر قائد میں ایک نوجوان نے معمولی جھگڑے پر اپنے بچپن کے دوست کو قتل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ رات کراچی کے علاقہ اسٹیل ٹاؤن جلالی بابا کی درگاہ کے قریب ایک نوجوان نے فائرنگ کرکے اپنے سب سے قریبی دوست زین العابدین کو قتل کردیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کی شناخت بلال کے نام ہوئی ہے۔
مقتول زین العابدین کے لواحقین نے پولیس کو بتایا کہ ملزم بلال اور مقتول زین العابدین بچپن کے دوست تھے۔ لیکن ان کا کسی بات پر کچھ ماہ قبل جھگڑا ہوا تھا جس کے بعد ان کی پچپن کی دوستی دشمنی میں بدل گئی تھی۔ گذشتہ رات زین العابدین جلالی بابا کے مزار پر دوستوں کے ساتھ بیٹھا تھا کہ پاس ہی موجود بلاول نے موقع ملتے ہی اس پر گولیاں برسا دیں اور موت کے گھاٹ اُتار دیا۔


مقتول کے لواحقین اور عینی شاہدین کے مطابق ملزم بلاول نے صرف زین کو ہی نہیں بلکہ اس کے والد کو بھی اپنی گولیوں کا نشانہ بنانا چاہا۔ زین کے والد جلالی بابا درگاہ کے گدی نشین ہیں تاہم مرید کی حاضر دماغی سے وہ بچ گئے۔ مقتول زین العابدین کے بھائی شاہ زیب نے بتایا کہ زین العابدین بی کام کے پیپرز کی تیاری کے ساتھ ساتھ ایک کمپنی میں کام بھی کرتا تھا۔
پولیس کے مطابق زین کو سر، گردن اور ہاتھ پر 5 گولیاں لگیں۔ زین العابدین زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی دم توڑ گیا۔ ملزم بلاول جائے واردات سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا جس کی تلاش شروع کر دی گئی ہے۔

مقتول کے لواحقین کا کہنا ہے کہ دونوں دوستوں میں جھگڑا کس بات پر ہوا اس حوالے سے ہمیں کچھ معلوم نہیں ہے، بس اتنا علم ہے کہ دونوں دوستوں کے مابین جھگڑا ہوا تھا جس کے بعد ان کی دوستی دشمنی میں تبدیل ہو گئی تھی۔ لواحقین نے پولیس سے مطالبہ کیا کہ ملزم بلال کو فی الفور گرفتار کر کے سلاخوں کے پیچھے پہنچایا جائے اور قانون کے مطابق سزا دے کر ہمارے بیٹے زین العابدین کے ناحق قتل کا بدلہ لیا جائے۔