- الإعلانات -

واٹس ایپ پر تذلیل،3 سال قید کی سزا

ابو ظہبی: متحدہ عرب امارات کی ایک عدالت نے ایک عمانی شخص کو میسجنگ ایپ ‘واٹس ایپ’ پر خیلجی ریاست کی ‘تذلیل’ کرنے پر 3 سال قید کی سزا سنادی.

خبر رساں ادارے نے بتایا ہے کہ 29 سالہ صالح محمد صالح الاویسی کو ‘ریاست کی ساکھ کو نقصان پہنچانے اور تذلیل کرنے کے مقصد سے معلومات کی تقسیم ‘ پر سزا دی گئی.

رپورٹ کے مطابق صالح نے واٹس ایپ پر ایک آڈیو ریکارڈنگ تقسیم کی، جس میں انھوں نے ‘ریاست اور اپنے شہیدوں کو یمن میں بزدلی اور خیانت کا ملزم’ قرار دیا.

صالح پر 50 ہزار درہم جرمانہ بھی کیا گیا.

ابھی تک اس بات کا تعین نہیں کیا جاسکا کہ صالح نے واٹس ایپ پر یہ پیغام کس کے ساتھ شیئر کیا اور یہ کتنے لوگوں تک پہنچا.

واضح رہے کہ سعوی عرب نے یمن کی حکومت کو حوثی باغیوں کے خلاف مدد فراہم کرتے ہوئے گذشتہ برس فوجی آپریشن کے آغاز کا اعلان کیا تھا۔

یمنی باغیوں کے خلاف کی جانے والی فوجی کارروائی میں قطر، کویت اور بحرین کے ساتھ متحدہ عرب امارات بھی سعودی عرب کا اہم اتحادی تھا.