- الإعلانات -

پلوٹو پر بادلوں کا انکشاف "NASA”

ایریزونا: ناسا کی جانب سے عام کئے جانے والی تصاویر میں پلوٹو کے برفیلے پہاڑوں پر فضا کی تہیں اور پرتیں دیکھی جاسکتی ہیں۔ تاہم ان پر کام کرنے والے ماہرین نے کہا ہے کہ انہوں نے بہت تفصیلی تصاویر میں پلوٹو پر بادل بھی دیکھے ہیں جو اس کی فضا کی حیرت انگیز تفصیلات ظاہر کرتےہیں۔

گزشتہ برس 13 ستمبر کو ماہرین نے پہلی مرتبہ پلوٹو پر بادلوں کا انکشاف کیا تھا۔ ایریزونا میں لوویل رصدگاہ کے سائنسداں وِل گرنڈی نے نیوہورائزن کی تصاویر کو غور سے دیکھا ہے اور چمکیلے بادل کی طرف نشاندہی کی ہے۔ گرنڈی نے پلوٹو کےکناروں سے کچھ اوپر دھند نوٹ کی ہے جس میں کئی پرتیں اور غلاف کی طرح لہریں دیکھی جاسکتی ہیں، اس کے علاوہ بعض چمکیلی اشیا نظر آرہی ہے جو کئی مقام پر موجود ہیں اور کہیں کہیں زمین کے قریب بھی دکھائی دے رہی ہیں۔

 

لیکن یہ تصاویر اتنی واضح نہیں ہیں کہ بادلوں کے سائے کہیں دیکھے جاسکیں۔ نیوہورائزن مشن کے سربراہ ایلن اسٹرن نے کہا ہے کہ بادلوں کی شناخت کا صرف ایک یہی طریقہ رہ جاتا ہے کہ فضائی دھند پورے پلوٹوکو اپنی لپیٹ میں لیے ہوئے ہے جب کہ بادل چمکیلے اجسام کی شکل میں کہیں کہیں دکھائی دے رہے ہیں۔

 

تاہم باقاعدہ طور پر اب تک پلوٹو پر بادلوں کا ذکر نہیں کیا گیا ہے۔ اس ضمن میں ایک تحقیقی مقالہ جرنل ’سائنس‘ میں شائع کیا جائے گا۔ پلوٹو پر میتھین، ایتھین، ایتھائلین اور ایسیٹائلین کے علاوہ نائٹروجن کے بھی آثار ملے ہیں۔