- الإعلانات -

خلائی فضلے کی صفائی کیلئے منصوعی سیارہ تیار

زمین کے مدار میں گردش کرنے والا فضلہ خلائی سائنسدانوں کےلیے پیچیدہ مسئلہ بن گیا,جس سے نجات کیلئے سائنسدانوں نے سیٹلائٹ منصوبہ شروع کردیا۔ برطانیہ کی ایک کمپنی نے زمین کے مدار میں گھومنے والے فضلے سے نجات کےلیے مصنوعی سیارے کا انوکھا منصوبہ جمع کرا دیا۔دی کلا نام کے مصنوعی سیارہ کا منصوبہ پیش کیا ہے جو زمین کے مدار میں زیرِ گردش اجسام کو جمع کرے گا۔

ماہرین ہر ماہ کوئی نہ کوئی راکٹ یا سیٹلائٹ زمینی مدار میں بھیجتے ہیں اور یہ سلسلہ دہائیوں سے جاری ہے۔ یہ اشیا ناکارہ ہوجاتی ہے، راکٹ پھٹنے سے ان کے ٹکڑے واپس زمین تک نہیں آتے اور اس طرح مسلسل زمین کے گردچکر کاٹتے رہتے ہیں۔برطانوی کمپنی کا کہنا ہے کہ ایک اندازے کے مطابق چھوٹے بڑے سولہ کروڑ ٹکڑے زمین کے مختلف مداروں میں گردش کررہے ہیں۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ دی کلا ’کلیئر اسپیس ون ‘ نامی سیارہ سنہ دو ہزار پچیس میں مدار میں بھیجا جائے گا تاکہ ان اجسام کو جمع کرے۔دی کلا اپنے پنجوں سے خلائی کوڑے کو اندر کھینچے گا اور اسے تلف کرے گا یا زمین تک لے کر واپس آئے گا۔