- الإعلانات -

فیس بک پر جعلی خبریں شیئر کرنے والوں کے ساتھ کیا ہوگا؟

سماجی رابطے کی سب سے بڑی سائٹ فیس بک نے تمام صارفین کو مطلع کیا کہ اگر ٹائم لائن پر جعلی خبریں شیئر کی جاتی رہیں تو آپ کچھ بھی شیئر نہیں کرسکیں گے۔

ہم سب کے علم میں ہے جہاں فیس بک سے کئی لوگ فائدہ اٹھاتے ہیں وہیں جعلی خبروں کے باعث متعدد لوگ مشکل کا شکار بھی ہوجاتے ہیں۔ اس حوالے سے فیس بک کچھ اقدامات کر رہا ہے جس کی تفصیل جاری کی گئی ہے۔ کمپنی کی جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق اس اکاؤنٹ کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی جو مسلسل غلط خبریں شیئر کررہا ہوگا۔

پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ کسی قسم کی خبر چاہے وہ ویکسین سے متعلق ہو یا کورونا وبا یا کوئی بھی دیگر خبر، کچھ لوگ صارفین کے اکاؤنٹس پر نظر رکھیں گے اور پھر خلاف ورزی کرنے والے کو ہر قسم کی شیئرنگ سے روک دیا جائے گا۔ اس حوالے سے فیس بک ایک نوٹس جاری کرے گا جس کے تحت جھوٹی خبریں پھیلانے والے صارف کی پوسٹ نیوز فیڈ پر سب سے نیچے چلی جائے گی۔

علاوہ ازیں سائٹ پر نوٹیفکیشن کے عمل کو دوبارہ تخلیق کیا جارہا ہے جس کے بعد نوٹیفکیشن کے ذریعے صارفین یہ جانچنے کے قابل ہوجائیں گے کہ آیا خبر درست ہے یا نہیں۔ واضح رہے یہ پالیسی محض انفرادی طور پر صارف کیلئے نہیں بلکہ فیس بک پیجز پر بھی لاگو ہوگی۔