- الإعلانات -

کار اپنے بیمار ڈرائیور کو ہسپتال لے گئی

امریکہ میں خودکار ٹیکنالوجی کی مدد سے چلنے والی ٹیسلا کار نے ڈرائیور کی طبعیت خراب ہونے پر انھیں بحفاظت ہسپتال پہنچا دیا۔

طبعیت خراب ہونے سے قبل ڈرائیور نے کار کو آٹو پائلٹ پر منتقل کر دیا تھا۔

جوشوا نامی ڈرائیور ٹیسلا کار کے ماڈل ایکس میں دفتر سے اپنے گھر جا رہے تھے کہ اچانک ان کی طعبیت خراب ہوگئی۔

ایمبولینس کو بلانے کی بجائے جوشوا نے کار کے آٹو پائلٹ فیچر اور خودکار ٹیکنالوجی کی مدد سے ہسپتال پہنچنے کا فیصلہ کیا۔

20 میل کے فاصلے پر واقع ہسپتال تک ٹیسلا کار نے جوشوا کو بحفاظت پہنچا دیا جہاں وہ خود کار پارک کر کے اندر چل کر گئے۔

 
گذشتہ ماہ اسی ماڈل کی کار آٹو پائلٹ پر چلتے ہوئے حادثے کا شکار ہوگئی تھی

ڈاکٹروں کے مطابق ان کے پھیپھڑوں کی شریان میں رکاوٹ آگئی تھی اور اگر وہ بروقت ہسپتال نہیں پہنچتے تو جوشوا کی موت بھی ہو سکتی تھی۔

خیال رہے کہ ٹیسلا کی آٹو پائلٹ فیچر سے آراستہ کار خود سے ہی راستہ بھی بدل سکتی ہے اور ٹریفک کی مناسبت سے خود ہی راستے کا تعین کرتی رہتی ہے۔

گذشتہ ماہ اسی ماڈل کی کار آٹو پائلٹ پر چلتے ہوئے حادثے کا شکار ہوگئی تھی جس کے بعد کمپنی نے کہا تھا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ آٹو پائلٹ کا فیچر درست طریقے سے استعمال نہیں کیا جا رہا تھا تاہم کمپنی نے معاملے کی مکمل تحقیق کرانے کا وعدہ کیا تھا۔

ٹیسلا کار میں استعمال کی جانے والی ٹیکنالوجی کے محفوظ ہونے یا نہ ہونے کے بارے میں امریکی محکمہ ’روڈ سیفٹی‘ بھی تحقیقات کر رہا ہے۔

لیکن جوشوا کا کہنا ہے کہ وہ خوش ہیں کہ انھوں نے آٹو پائلٹ فیچر استعمال کیا تھا اور ان کے بقول انھیں یقین ہے کہ یہ فیچر مستقبل میں بھی بہت سے لوگوں کی زندگیاں بچائے گا۔