- الإعلانات -

سوشل میڈیا پر ہونے والی ان غلطیوں سے اپنی بہنوں بیٹیوں کو بھی بچائیں

سوشل میڈیا کا استعمال جس قدر بڑھ رہا ہے، اسی طرح بہت محتاط رہنے کی بھی ضرورت ہے، چلیے جان لیتے ہیں کہ آن لائن محفوظ رہنے کے لیے خاص طور پر نو عمر لڑکیوں کو کن باتوں کا خیال رکھنا چاہیے اور والدین کو کس قدر حساس ہونے کی ضرورت ہے؟انٹرنیٹ کی دنیا کتنی ہی رنگ برنگی اور چمک دمک سے بھرپور کیوں نہ ہو، اس پر بھروسہ ہرگز نہیں، خاص طور پر نو عمر لڑکیوں کو انٹرنیٹ کی اس دنیا میں بہت سنبھلنا ہوگا، کسی پر اندھا اعتماد نہ کریں۔اجنبیوں کی جانب سے آنے والی فرینڈ ریکوئسٹ ہرگز قبول نہ کریں، آن لائن یا حقیقی زندگی، اگر کوئی نئے دوست بنائیں، تو آپ کے ان دوستوں کے بارے میں گھر والوں کو ضرور معلوم ہونا چاہیے۔اکثر دھوکے اعتماد کے نام پر ہی ہوتے ہیں، اس لیے اگر کوئی 146کیا تمہیں مجھ پر اعتماد نہیں145 جیسی لفاظی کرکے حدود کراس کرنے کی کوشش کرے، اسے وہیں روک دیں۔کبھی کسی اجنبی کے ساتھ کسی اجنبی مقام پر اکیلے نہ جائیں،کوئی آپ کو باہر ملنے کی درخواست کرے تو اپنے گھر والوں کو مطلع کریں،یاد رکھیے، آپ کا گھر ہی آپ کی اصل پناہ گاہ ہے اور گھر والے ہی اصل محافظ ہیں۔والدین بھی اپنے بچوں کے دوست بنیں، انہیں اتنا قریب رکھیں کہ درمیان ایسا کوئی فاصلہ نہ ہوجس کے بیچ کسی اجنبی کی گنجائش بنے۔بچوں کی ایکٹوٹیز پر صرف نظر نہ رکھیں بلکہ خود بھی ان کے ساتھ شریک ہوں اور ہاں صرف بیٹیاں ہی نہیں بلکہ بیٹوں کی ایکٹوٹیز پر بھی اتنی ہی نظر رکھنے کی ضرورت ہے۔