- الإعلانات -

جے ایف 17 تھنڈر کے لیے جدید ترین ریڈار تیار

بیجنگ: چین کے نانجنگ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ آف الیکٹرونکس ٹیکنالوجی (NRIET) نے حال ہی میں منعقدہ ’’ژوہائی ایئر شو‘‘ کے موقعے پر ایک جدید ریڈار پیش کیا ہے جس کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ اسے خاص طور پر جے ایف 17 تھنڈر ’’بلاک3‘‘ میں نصب کرنے کے لیے تیار کیا گیا ہے۔

KLJ-7A کہلانے والا یہ ریڈار ’’اے ای ایس اے‘‘ (AESA) قسم کے جدید ترین ریڈارز سے تعلق رکھتا ہے جنہیں لڑاکا طیاروں میں استعمال کیا جاتا ہے۔ ژوہائی ایئر شو کے موقعے پر اس ریڈار کی جو نمایاں خصوصیات بتائی گئی ہیں ان میں جائزہ لیتے دوران ہدف کی درست شناخت، ایک وقت میں کئی اہداف کی نشاندہی اور انہیں نشانہ بنانے کی صلاحیت اور زمین پر حرکت کرتے ہوئے اہداف کی (سنتھیٹک اپرچر ریڈار کی مدد سے) شناخت وغیرہ شامل ہیں۔

اگرچہ KLJ-7A کے بارے میں اس سے زیادہ تفصیلات دستیاب نہیں لیکن دفاعی ٹیکنالوجی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ اس میں سینکڑوں چھوٹے چھوٹے ریڈار ایک ساتھ نصب ہیں اور یہ 170 کلومیٹر دُور تک نظر رکھنے کے علاوہ بیک وقت 15 اہداف کی شناخت اور (ان میں سے) 4 کا نشانہ لینے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے۔

دیگر اے ای ایس اے ریڈارز کی طرح KLJ-7A بھی نہ صرف دشمن کے ریڈار سسٹم کو جام کرسکتا ہے بلکہ دشمن کی جانب سے اپنا ریڈار جام کرنے کی کوششوں کو ناکام بھی بناسکتا ہے۔

واضح رہے کہ جے ایف 17 تھنڈر بلاک1 اور بلاک2 میں بالترتیب KLJ-7 اور KLJ-7V2 اے ای ایس اے ریڈار نصب ہیں۔ البتہ KLJ-7A کی جسامت اور ساخت کے مدنظر، ماہرین کو پورا یقین ہے کہ اسے خاص طور پر جے ایف 17 تھنڈر ’’بلاک3‘‘ میں تنصیب کےلئے ہی ڈیزائن کیا گیا ہے۔