- الإعلانات -

روزگار کی تلاش میں بھی سمارٹ فون مدد دیں گے

ماہرین تعلیم کی ایک ٹیم نے سروے رپورٹ میں مستقبل کے تعلیمی نظام کے بارے میں حیران کن انکشافات کیے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق اگلے 10 سے 20 سال کے اندر اندر دنیا کو بالکل نئے تعلیمی ڈھانچے کا سامنا کرنا پڑے گا، اور 20 سال بعد تعلیم یونیورسٹیوں میں کم ہو جائے گی، کتب لائبریریوں میں کم ملیں گی، یہ دونوں چیزیں انٹرنیٹ پر زیادہ دستیاب ہوں گی۔ اس بدلتے ہوئے نظام کے اعلیٰ تعلیم زیادہ اثرات مرتب ہوں گے۔ ماہرین نے خبردار کا ہے کہ اس کے منفی اور مثبت اثرات سے نمٹنے کے لئے ابھی سے کوششیں کرنا ہوں گی، ورنہ بڑا سماجی اور سیاسی بحران آ سکتا ہے۔ماہرین کے مطابق پچھلے چند برسوں میں دنیا بھر میں”لرنگ مینجمنٹ سسٹم“ کو فروغ حاصل ہونے سے اذہان بدلنا شروع ہو گئے ہیں۔ اس لیے مستقبل میں طلبہ کا سب سے بڑا ” تعلیمی ہتھیار اور مددگار“ سمارٹ فون ہو گا، جس کی مدد سے وہ خود کو زیور تعلیم سے آراستہ کریں گے اور علم کی روشنی حاصل کریں گے۔ 2025ء تک اربوں موبائل فونز انٹرنیٹ سے منسلک ہوں گے۔ یہ تعداد انسانی آبادی سے زیادہ ہے، جس کا مطلب یہ ہوگا کہ ایک ایک سسٹم کے پاس کئی کئی موبائل سیٹ ہوں گے۔ ان ماہرین نے اسے ”ڈیٹا کے سونامی“ سے تعبیر کیا ہے۔