- الإعلانات -

سی این ایس اے نے روبوٹ جہاز کی نئی تصاویر جاری کردی

بیجنگ :  چائنا نیشنل اسپیس ایڈمنسٹریشن (سی این ایس اے) نے روبوٹ جہاز کی نئی تصاویر جاری کی ہیں جس میں چاند کی سطح کی تفصیلات نہایت وضاحت کے ساتھ دیکھی جاسکتی ہیں۔ یہ تصاویر یوٹو اور چینگ تھری نامی روبوٹ نے بھیجی ہیں جو اس وقت چاند کی سطح پر موجود ہیں۔ تاریخی لحاظ سے یہ 40 سال بعد چاند پر جانے والے کسی روبوٹ کی پہلی تصاویر ہیں، ان تصاویر میں چاند کے پتھروں کے علاوہ وہاں موجود باریک مٹی بھی دیکھی جاسکتی ہے جو ہرجگہ موجود ہے، یہ مٹی روبوٹ کے تمام آلات کو متاثر کرکے اسے خراب کرسکتی ہے اور اس مٹی میں ہزاروں وولٹ کی برقِ سکونی (اسٹیٹک الیکٹرسٹی) موجود ہوسکتی ہے جو نازک آلات کو تباہ کرسکتی ہے۔ چینی ماہرین کے مطابق چند ہفتوں بعد چینگ تھری روبوٹ چاند پر رگڑ کر چلنے کے بعد ایک مقام پر رک جائے گا۔ چینگ تھری دسمبر 2013 کو چاندکی سطح پر اترا تھا اور اب تک وہ چاند کی ہزاروں بہترین تصاویر بھیج چکا ہے جب کہ نئی تصاویر میں چاند پر چھوٹے بڑے پتھروں کے ڈھیر دیکھے جاسکتے ہیں۔ چینی خلائی ایجنسی کے مطابق اب تک سب سے پہلے اور سب سے آخر میں لی جانے والی تصاویر جاری نہیں کی گئی ہیں تاہم اس کی جلد مزید تصاویر بھی جاری کی جائیں گی۔ سی این ایس اے کے مطابق چینگ فور نامی خلائی جہاز جلد ہی چاند پر بھیجا جائے گا جو چاند کے ان حصوں کی تصاویر فراہم کرے گا جنہیں اب تک نہیں دیکھا گیا کیونکہ وہ زمین سے دور رہتا ہے۔