- الإعلانات -

امریکہ میں’گرد باد‘ کے خدشے کا جائزہ

امریکی سائنسدانوں نے سنہ 1930 کی دہائی میں آنے والے گردباد کا نمونہ تیار کرکے یہ دیکھنے کی کوشش کی ہے کہ اگر آج یہ ’گرد باد‘ آیا تو امریکی زراعت پر اس کے کیسے اثرات مرتب ہوں گے۔

سائنسدانوں کو تحقیق میں پتہ چلا کہ آج آنے والے گردباد اتنے ہی تباہ کن ہوں گے جتنے پہلے ہوئے تھے۔

تاہم تازہ تحقیق میں یہ بات سامنے آئي ہے درجۂ حرات میں اضافے کے پیش نظر تباہی کہیں زیادہ ہوگی۔

اگر امریکہ میں پھر سے سنہ 1930 کی دہائی والا موسم آتا ہے تو مکئی کی فصل میں 40 فی صد کی کمی ہو جائے گي لیکن اگر اس میں دو ڈگری درجۂ حرارت کا اضافہ کیا جائے تو فصل میں 65 فی صد تک کمی ہوگي۔

شکاگو یونیورسٹی کے کمپیوٹیشن انسٹیچیوٹ کے جوشوا ایلیٹ نے کہا: ’سنہ 1930 کی دہائی واقعتاً بہت شدید تھی اور اس کے پھر سے واقع ہونے کے امکانات بہت کم ہیں جبکہ درجۂ حرارت کی تقسیم اب اس قدر شدید نہیں جتنی ہم نے سنہ 2012 یا سنہ 1998 میں دیکھی تھی۔