کھیل

افغانستان کیخلاف غیر ضروری اپیلیں ویرات کوہلی کو مہنگی پڑگئی

آئی سی سی نے بار بار غیر ضروری اپیلیں کرنے پر بھارتی ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی کو میچ فیس کا 20 فیصد جرمانہ کردیا۔

گزشتہ روز بھارت نے سنسنی خیز مقابلے کے بعد افغانستان کو 11 رنز سے شکست دیدی تھی تاہم اس دوران ویرات کوہلی بار بار غیرضروری اپیل کرتے رہے جس پر آئی سی سی حرکت میں آگئی اور کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی کرنے پر ویرات کوہلی کو بھاری جرمانہ کردیا اور ڈسپلنری ریکارڈ پر بھی ایک ڈی میرٹ پوائنٹ کا اضافہ کردیا۔

افغانستان کے خلاف کامیابی کے بعد بھارتی ٹیم اس وقت مجموعی طور پر 9 پوائنٹس کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے ،ورلڈ کپ میں سب سے شاندار کارکردگی دکھانے والی ٹیم نیوزی لینڈ  11 پوائنٹس کے ساتھ پہلے نمبر جب کہ آسٹریلیا 10 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔  انگلینڈ 8 پوائنٹس کے ساتھ چوتھے ، سری لنکا 6 پوائنٹس کے ساتھ پانچویں ، بنگلہ دیش 5 پوائنٹس کے ساتھ چھٹے ، ویسٹ انڈیز3 پوائنٹس کے ساتھ ساتویں ، جنوبی افریقہ تین پوائنٹس کے ساتھ 8 ویں ، پاکستان تین پوائنٹس کے ساتھ 9 ویں نمبر پر ہے۔ افغانستان کا کوئی پوائنٹ نہیں ہے اور وہ پوائنٹس ٹیبل میں آخری نمبر پر ہے۔

گالم گلوچ اور ذاتی حملے، سرفراز کا ضبط جواب دے گیا

لندن: گالم گلوچ اور ذاتی حملوں پر کپتان سرفراز احمد کا ضبط بھی جواب دے گیا، انھوں نے کہا کہ خراب کھیل پر تنقید ضرور کریں گالیاں تو نہ دیں۔

بھارت سے شکست پر سابق کرکٹرز اور شائقین کی جانب سے پاکستانی کھلاڑیوں پر شدید تنقید کے ساتھ گالم گلوچ اور ذاتی نوعیت کے حملے بھی کیے گئے، گذشتہ روز ایک ویڈیو میں ایک شخص کپتان سرفراز پر اس وقت فقرے کس رہا تھا جب وہ اپنے بچے کو گود میں اٹھائے ہوئے تھے۔ ان سب چیزوں پر آخر کار سرفراز کا ضبط جواب دے گیا اور جنوبی افریقہ کیخلاف میچ سے قبل پریس کانفرنس میں وہ پھٹ پڑے، انھوں نے خاص طور پر سابق کرکٹرز کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

کپتان نے کہا کہ اگر میں ان کے بارے میں کچھ کہوں تو یہ ایک ایشو بن جائے گا، بہتر یہی ہے کہ کچھ نہ کہوں، وہ سمجھتے ہیں کہ ہم کرکٹرز ہی نہیں ہیں، اس لیے اگر ہم انھیں جواب دیں گے تو وہ اسے ایک جرم کی طرح لیں گے وہ ’خدا بن کے ٹی وی پر بیٹھے ہیں‘۔  سرفراز نے کہا کہ ٹیم میں کسی قسم کی دھڑے بندی نہیں ہے، جب آپ ہاریں تو پھر لوگ اسی طرح کی باتیں کرتے ہیں۔

شائقین کی جانب سے ہونے والی فقرے بازی اور کچھ لوگوں کی گالم گلوچ سے متعلق کپتان نے کہا کہ سوشل میڈیا اور روایتی میڈیا ہمارے کنٹرول میں نہیں ہے، وہ بہت بڑے اور آپ انھیں روک نہیں سکتے، ٹیمیں پہلے بھی ہارتی رہی ہیں مگر اب سوشل میڈیا پر طوفان مچ جاتا ہے، جس کے ذہن میں جو آئے وہ لکھ دیتا ہے، ایسی چیزوں سے پلیئرز نفسیاتی طور پر کافی متاثر ہوتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے کھیل پر بے شک تنقید کریں کوئی مسئلہ نہیں ہے مگرگالیاں تو نہ دیں،اس سے کھلاڑیوں کی فیملیز متاثر ہوتی ہے، ہمارے شائقین کافی جذباتی ہیں، فتح پر یہی لوگ ہمیں کندھوں پر اٹھا لیتے ہیں، اگر شکست پر وہ دکھی ہوتے ہیں تو ہم ان سے زیادہ دکھ محسوس کرتے ہیں، ہم پاکستان کیلیے ہی کھیل رہے ہوتے ہیں۔

بھارت سے میچ،ٹاس جیت کر بولنگ کے فیصلے پر کوئی افسوس نہیں،سرفراز

سرفراز احمد نے کہا ہے کہ بھارت سے میچ میںٹاس جیت کر پہلے بولنگ کے فیصلے پر کوئی افسوس نہیں، پریس کانفرنس میں ان سے سوال ہوا کہ عمران خان کے مشورے کو انھوں نے رد کیوں کیا؟

جواب میں پاکستانی کپتان نے کہا کہ میں نے عمران بھائی کی ٹویٹ دیکھی ان کا کہنا تھا کہ اگر پچ گیلی نہ ہو تو پہلے بیٹنگ کرنی چاہیے،  بولنگ کرنا ٹیم کا مشترکہ فیصلہ تھا، ہم نے ایسا بارش کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا، جس وقت فخر زمان اور بابر اعظم بیٹنگ کر رہے تھے ہم ڈک ورتھ پر مطلوبہ ہدف سے صرف 9 رنز پیچھے تھے مگر پھر ایکدم سے وکٹیں گر گئیں اور میچ ہاتھ سے نکل گیا۔

جماہی کوئی گناہ نہیں، یہ نارمل چیز اورکسی کوبھی آ سکتی ہے، سرفراز

سرفراز احمد نے کہا ہے کہ جماہی کوئی گناہ نہیں، یہ نارمل چیز اور کسی کو بھی آ سکتی ہے، گذشتہ روز پریس کانفرنس میں اس حوالے سے سوال پر انھوں نے کہا کہ بھارت سے میچ میں جب مجھے جماہی لیتے دکھایا گیا تب وقفہ تھا، مگر میری جماہی کی تصاویر لے کر سب نے پیسے بنائے، خیر میری وجہ سے کسی کا بھلا ہوگیا تو اچھی بات ہے۔

آرمی چیف بھی قومی ٹیم کی حوصلہ افزائی کیلیے لارڈز پہنچ گئے

لندن: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ قومی ٹیم کا میچ دیکھنے کے لیے لندن کے گراؤنڈ لارڈز میں موجود ہیں۔

کرکٹ ورلڈکپ کا 30واں میچ پاکستان اور جنوبی افریقا کے درمیان لندن کے گراؤنڈ لارڈز میں جاری ہے، میچ دیکھنے کے لیے پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ بھی گراؤنڈ میں موجود ہیں۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ لارڈرز میں پاکستان کا میچ انجوائے کررہے ہیں، ان کے ہمراہ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور اور برطانوی وزیر خارجہ جیریمی ہنٹ بھی اسٹیڈیم میں موجود ہیں۔

باکسرعامرخان اب سعودی عرب کے نوجوان باکسرزکو بھی باکسنگ کا فن سکھائیں گے

پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامرخان اب سعودی عرب کے نوجوان باکسرزکو بھی باکسنگ کا فن سکھائیں گے

عالمی شہرت یافتہ باکسرنے 25 جون کو جدہ میں ٹریننگ کا اہتمام کررکھا ہے جس میں انہوں نے سعودی عرب میں موجود نوجوان باکسرز سے کہا ہے کہ وہ آئیں اور ان کی نگرانی میں بھرپورٹریننگ حاصل کریں۔

عامر خان کا مقابلہ آئندہ ماہ بھارتی باکسرنیرج گویت کے ساتھ شیڈول ہے، یہ مقابلہ 12 جولائی کو جدہمیں ہوگا۔عامر خان نےاعلان کر رکھا ہے کہ وہ بھارتی باکسر کو ہرا کر ورلڈ کپ میں گرین شرٹس کی شکست کا بدلہ لیں گے۔

یاد رہے کہ عامر خان اس سے قبل پاکستانی باکسرز کو بھی باکسنگ کی ٹریننگ دے چکے ہیں۔

 

زمبابوے حکومت نے حکم عدولی پرزمبابوے کرکٹ بورڈ کومعطل کردیا

زمبابوے حکومت نے حکم عدولی پر زمبابوے کرکٹ بورڈ کو معطل کردیا۔

زمبابوے حکومت نے حکم عدولی پر زمبابوے کرکٹ بورڈ کو معطل کردیا۔ زمبابوے کرکٹ بورڈ کے قائم مقام ایم ڈی گیومورمکونی کوبھی ان کے عہدے سے الگ کردیا گیا۔ زمبابوے کرکٹ بورڈ میں مالی بدعنوانیوں کی انکوائری کرنے والے حکومتی ادارے اسپورٹس اینڈ ری کریشن کمشن نے انتخابات سے روک دیا تھا تاہم زمبابوے کرکٹ بورڈ کے معاملات دیکھنے والے حکام نے ان ہدایات کو نظر انداز کرتے ہوئے انتخابی عمل مکمل کیا۔

نومنتخب صدر نےموقف اختیارکیا کہ زمبابوے کرکٹ بورڈ آئی سی سی کا ممبر ہے اوراس کے معاملات میں حکومت مداخلت کرنے کی مجاز نہیں، جس پرحکومت نے ایکشن لیتے ہوئے بورڈ کی سرگرمیاں کو معطل اورآفیشلز کو فارغ کرکے ایک سات رکنی عبوری کمیٹی قائم کردی ہے۔

پبلشنگ پارٹنر ‘پاکستان کو سرفراز سے پیار ہے’، سوشل میڈیا کپتان کی حمایت میں بول اٹھا

انگلینڈ میں جاری کرکٹ ورلڈکپ 2019 کے دوران پاکستان کرکٹ ٹیم کی ناقص کارکردگی کے بعد قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد اور ٹیم کے دیگر کھلاڑی سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر تنقید کی زد میں ہیں۔

ایونٹ میں پاکستان کی ٹیم اب تک صرف ایک ہی میچ جیتنے میں کامیاب ہوئی جو اس نے میزبان انگلینڈ کے خلاف جیتا، تاہم قومی ٹیم آسٹریلیا کے خلاف جیتی بازی ہار گئی جبکہ بھارت کے خلاف میچ میں ایک مرتبہ پھر قومی ٹیم دباؤ کا شکار ہوکر آؤٹ کلاس ہوگئی۔

پوائنٹس ٹیبل پر نظر دوڑائی جائے تو پاکستان کا نیٹ رن ریٹ منفی دکھائی دیتا ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ جیت کے 3 پوائنٹس بھی دکھائی دیتے ہیں۔

اس کے بر عکس پاکستان ٹیم کی بھارت کے ہاتھوں شکست کے بعد سوشل میڈیا کو استعمال کرتے ہوئے شائقین نے اپنا غم و غصہ بھر پور انداز میں نکالا اور بات یہاں تک پہنچ گئی تھی کہ ٹوئٹر پر ‘سرفراز کو گھر بھیجو’ کا ٹرینڈ بھی سیٹ ہوگیا تھا۔

تاہم 2 روز قبل ایک ویڈیو منظر عام پر آئی جس میں ایک شخص نے قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کو روکا اور ان کے ساتھ تصویر بنانے کی درخواست کی، جسے قومی ٹیم کے کپتان نے قبول کرلیا۔

مذکورہ شخص نے اس وقت سرفراز احمد کی تصویر نہیں بلکہ ایک ویڈیو بنائی جس میں وہ قومی ٹیم کےکپتان کو تضحیک آمیز الفاظ سے پکار رہا ہے۔

اپنے بیٹے کو گود میں اٹھائے سرفراز احمد نے اس شخص کی بات کا کوئی جواب نہ دیا اور سیدھا چلے گئے، تاہم اس شخص نے ویڈیو کو سوشل میڈیا پر شیئر کردیا۔

ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد پاکستانی شائقین نے ویڈیو بنانے والے شخص پر شدید تنقید کی جبکہ سرفراز احمد کے اظہار یکجہتی بھی کیا۔

پاکستانی شائقین سرفراز احمد کی حمایت میں سامنے آئے اور ان کی بہترین کارکردگی کا گن گانے لگے اور ٹوئٹر پر ‘پاکستان کو سرفراز سے پیار ہے’ اور ‘ہم سرفراز کے ساتھ کھڑے ہیں’ ٹاپ ٹرینڈ بن گئے۔

ایک شخص نے سرفراز احمد کی بطور کپتان کارکردگی کا حوالہ دیتے ہوئے ایک تصویر شائع کی جس میں انہیں انڈر 19 ورلڈکپ، چیپمیئنز ٹرافی 2017 اور پاکستان سپر لیگ 2019 کی ٹرافی اٹھائے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

ایک شخص نے سرفراز احمد کی چیمپیئنز ٹرافی ٹورنامنٹ کی ٹرافی کے ہمراہ سرفراز احمد کی تصویر شائع کی جس میں انہوں نے لکھا کہ ایسا کیسے ہوسکتا ہے کہ کوئی سرفراز احمد سے پیار نہ کرے۔

ایک صارف نے لکھا کہ سرفراز احمد اپنے 2 سالہ بیٹے کے ہمراہ تھے، تصور کریں کہ اگر آپ اپنے اہل خانہ کے ہمراہ ہوں اور کوئی آپ کے ساتھ اس طرح کا برتاؤ کرے تو کیسا محسوس ہو۔

ان صارف کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس شخص کی اس حرکت کو نظر انداز کرکے اچھا کیا، جو عملی طور پر ایک مشکل ترین کام تھا۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر شدید تنقید کی وجہ سے سرفراز احمد کی تضحیک کرنے والا شخص معافی مانگنے پر مجبور ہوگیا اور اس نے اپنی معافی کی ویڈیو بھی جاری کی۔

اس ویڈیو میں اس شخص نے سب سے پہلے سرفراز احمد سے معافی مانگی اور پھر پوری قوم سے بھی معافی مانگی۔

اس شخص کا کہنا تھا کہ واقعے کے بعد سرفراز احمد کی ان سے بات ہوئی تھی، اور انہوں نے ویڈیو ڈیلیٹ بھی کر دی تھی، تاہم یہ کسی طرح اپ لوڈ ہوگئی، اس کا علم نہیں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مجھے نہیں معلوم تھا کہ اس ویڈیو کے ایسے نتائج سامنے آئیں گے، تاہم وہ اپنی اس ویڈیو پر ندامت محسوس کر رہے ہیں۔

سرفراز احمد کی حمایت میں عام لوگ ہی نہیں بلکہ اسپورٹس کے صحافیوں اور بولی ووڈ شخصیات سامنے آئیں۔

بولی ووڈ اسٹار رتیش دیشمکھ نے ایک ٹوئٹ کے جواب میں کہا کہ تاریخ میں کوئی نہ کوئی کپتان اہم ترین میچ ہارا ہے، سرفراز احمد اس (تضحیک) کے حقدار نہیں ہیں۔

انہوں نے مزید کہ یہ ہراسانی کا معاملہ ہے، سرفراز احمد اپنے بچے کے ساتھ تھے۔

پاکستانی ماڈل و اداکارہ وینا ملک بھی سرفراز احمد کی حمایت میں سامنے آئیں اور ٹوئٹر پر اس حوالے سے پول بھی چلایا۔

انہوں نے کہا کہ سرفراز احمد نے مختلف مواقع پر قوم کا سر فخر سے بلند کیا، ان کی کپتانی میں پاکستان انڈر 19 ورلڈکپ اور چیمپیئنز ٹرافی جیتنے میں کامیاب ہوا۔

وینا ملک نے مزید کہا کہ سرفراز احمد کے شدید دباؤ کا شکار ہیں، ہمیں ایسے میں ان کی بھر پور حمایت کرنی چاہیے۔

پی سی بی سربراہ احسان مانی کل لندن روانہ ہوں گے

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ احسان مانی ایک ماہ کے دورے پر کل لندن روانہ ہورہے ہیں۔

پی سی بی سربراہ احسان مانی ایک ماہ کے دورے پر کل لندن روانہ ہوں گے، ایم ڈی وسیم خان بھی جولائی کے دوسرے ہفتے دوبارہ برطانیہ جائیں گے۔ احسان مانی کو آئی سی سی کے سابق صدر کی حیثیت سے ورلڈکپ میچوں پر مدعو کیا گیا ہے، وہ فائنل تک کرکٹ کی عالمی باڈی کے مہمان ہوں گے، اس کے بعد 15 سے 20 جولائی تک  آئی سی سی کا سالانہ اجلاس  ہورہاہے۔

ذرائع کے مطابق ایم ڈی وسیم خان بھی آئی سی سی ورلڈکپ کا فائنل دیکھیں گے اور پھر احسان مانی کے ساتھ وہ بھی سالانہ اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کریں گے جب کہ اتوار کو شیڈول میچ سے پہلے احسان مانی کی لندن میں موجود قومی ٹیم سے بھی ملاقات کا امکان ہے۔

پی سی بی کا ایک بارپھر ریٹائرڈ کرکٹرز سے رابطوں کا فیصلہ

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ نے ریٹائرڈ کرکٹرز سے رابطوں کا فیصلہ کرلیا ہے۔

ذرائع کےمطابق ورلڈکپ کے بعد سابق کپتان اور کرکٹ کمیٹی کے رکن مصباح الحق کو بورڈ میں مزید ذمہ داریاں سونپے جانے کا امکان ہے۔  بورڈ سربراہ احسان مانی اور ایم ڈی وسیم خان دور حاضر کے ریٹائرڈ کرکٹرز سے نوجوانوں کی گرومنگ کا کام لینا چاہتے ہیں۔

پی سی بی نے اس سے قبل یونس خان، محمد یوسف اور مصباح الحق کو انڈر 19 ٹیم کے ساتھ کام کرنے کی آفر کی تھی لیکن کسی کے ساتھ بات فائنل نہیں ہوپائی تھی۔ کوچز کی تقرری سمیت اہم  فیصلوں کا اختیار ملنے کے بعد وسیم خان ایک بار پھرسابق کرکٹرز  کو اکیڈمی اور یوتھ ٹیموں کے ساتھ کام کے لیے آمادہ کریں گے۔

بورڈ حکام گراس روٹ سطح پر کرکٹ میں بہتری لانے اور یوتھ ماڈل کو بھارت سے زیادہ کامیاب کرنے کے خواہاں ہیں اور اس تجویز کو عملی جامہ پہنانے کے لیے دور حاضر کے ریٹائرڈ  کرکٹرز کی ہر صورت خدمات لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

Google Analytics Alternative