- الإعلانات -

فٹبالر نیمار کے تقریباً پانچ کروڑ ڈالر مالیت کے اثاثے منجمد

ساؤ پاؤلو: برازیلین حکام نے ٹیکس چوری کے الزام پر بین الاقوامی فٹبالر نیمار کے تقریباً پانچ کروڑ ڈالر مالیت کے اثاثے منجمد کر دیے ہیں۔ غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق گزشتہ برس برازیل میں نیمار، ان کے اہلِ خانہ اور ان کے کاروبار پر تقریباً ایک کروڑ 60 لاکھ امریکی ڈالر کے مساوی ٹیکس چوری کا الزام ثابت ہوا تھا۔ برازیل کی وفاقی ٹیکس ایجنسی کے وکیل کا کہنا ہے کہ یہ رقم 2011 سے 2013 کے دوران اس وقت بچائی گئی جب نیمار برازیلی کلب سینٹوس کے لیے کھیل رہے تھے۔نیمار نے اس فیصلے کے خلاف وفاقی عدالت سے رجوع کیا تھا تاہم عدالت نے ان کی اپیل گزشتہ ہفتے مسترد کردی تھی۔ جس کے بعد برازیل کے حکام نے ان کے جو اثاثے منجمد کئے ہیں۔ ان میں ایک لگژری کشتی، ایک طیارہ اور کئی عمارات شامل ہیں۔برازیل کی وفاقی ٹیکس ایجنسی کے آڈیٹر آئیگارو جونگ مارٹنز کا کہنا ہے کہ ٹیکس چوری سے متعلق برازیل کے قوانین زیادہ سخت نہیں ہیں، نیمار عدالتی فیصلے کے خلاف بھی اپیل کر سکتے ہیں لیکن یہ آگے کی جانب ایک قدم ہے۔ اگر وہ اپنے ذمے واجب الادا رقم دے دیتے ہیں تو یہ معاملہ یہیں معاملہ ختم ہو جائے گا۔واضح رہے کہ نیمار کے خلاف ٹیکس بچانے اور دھوکہ دہی کے الزامات کے تحت سپین میں بھی ایک مقدمہ جاری ہے۔ جس میں استغاثہ کا موقف ہے کہ نیمار، ان کے خاندان اور بارسلونا فٹبال کلب نے برازیلی کلب سینٹوس سے ان کی ہسپانوی کلب کو منتقلی کے سلسلے میں دی جانے والی اصل رقم ظاہر نہیں کی۔