- الإعلانات -

بھارتی حکومت کی سیکیورٹی صلاحیت سوالیہ نشان بن گئی

اسلام آباد :  سابق وفاقی وزیر سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ حکومت قانون سے متصادم کوئی کام نہیں کرے گی، بھارتی حکومت کی سیکیورٹی صلاحیت سوالیہ نشان بن گئی ہے، پاکستان کھیل کو کھیل سمجھتا ہے ۔ جمعہ کو پارلیمنٹ ہاﺅس کے باہر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کراچی میں رینجرز نے ایک ایسے اہم مسئلہ کو حل کیا جو پولیس کرنے میں ناکام رہی ، حکومت سے مطالبات کرنا بری بات نہیں ، حکومت پاکستان قانون کے متصادم کوئی کام نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم کے حوالے سے سرفراز مرچنٹ نے جو باتیں کی ہیں بطور ریاست پاکستان کو ان الزامات کی تحقیقات ضرور کرنی چاہئے۔ اگرکسی کے خلاف ثبوت ملتے ہیں تو کارروائی کرنی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کھیل کو کھیل سمجھتا ہے، وزیر داخلہ نے قومی کرکٹ ٹیم بھیجنے کے حوالے سے درست موقف اپنایا ہے، بھارت کی سیکیورٹی صلاحیت پوری دنیا کےلئے سوالیہ نشان بن گئی ہے جبکہ بھارت سلامتی کونسل میں ممبرشپ کا مطالبہ کررہا ہے، یہ ان کےلئے کالا دھبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم کا وقار کھیل سے زیادہ مقدس ہے ، بھارتی حکومت پاکستانی کرکٹ ٹیم کو سیکیورٹی نہیں دے سکتی تو دوسری ٹیموں کو کیسے دے رہی ہے۔ اس حوالے سے آئی سی سی کو سوچنا ہوگا، بھارت کھیل کو کھیل سمجھے پاکستانی کرکٹ ٹیم کرکٹ کھیلنا چاہتی ہے۔