- الإعلانات -

ہار جیت کھیل کا حصہ ہے، کھلاڑیوں نے گراﺅنڈ میں بھرپور محنت کی

ہار جیت کھیل کا حصہ ہے، کھلاڑیوں نے گراﺅنڈ میں بھرپور محنت کی، مجموعی طور پر ٹیم کی کارکردگی بہتر رہی، ویمن ٹیم میں کسی قسم کے اختلافات نہیں ہیں، ثناءمیر
لاہور ۔ ٹی ٹونٹی کرکٹ ورلڈ کپ میں شرکت کے بعد قومی ویمن کرکٹ ٹیم ثناءمیر کی قیادت میں بھارت سے وطن واپس پہنچ گئی۔ 15رکنی قومی ویمن ٹیم میں کپتان ثناءمیر، جویریہ ودود، ناہیدہ بی بی، سدرہ امین، بسمعہ معروف، منیبہ علی صدیقی، ندا راشد، ارم جاوید، عصماویہ اقبال کھوکھر، انعم امین، ڈیانا بیگ، سعدیہ اقبال، عالیہ ریاض، سدرہ نواز اور سیدہ نین فاطمہ عابدی، ٹیم مینجر عائشہ اشعر، کوچ محتشم الرشید، سیکورٹی مینجر اور دیگر عہدیدار شامل ہیں۔ قومی ویمن ٹیم نے ٹورنامنٹ میں بھارت اور بنگلہ دیش کی ٹیموں کو شکست دی تھی لیکن کوارٹر فائنل میں اسے انگلینڈ کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ ویمن ٹیم نے ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ میں مجموعی طور پر چار میچز کھیلے جس میں سے دو جیتے اور دو ہارے اور چار پوائنٹس حاصل کئے۔ قومی ویمن ٹیم کی کپتان ثناءمیر نے وطن واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ کپتانی سے ریٹائرمنٹ کے فیصلے پر قائم ہیں۔ ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ میں تمام کھلاڑیوں نے 100فیصد پرفارمنس دینے کی بھرپور کوشش کی اور بھارت اور بنگلہ دیش کی ٹیموں کو ورلڈ کپ میں شکست دی۔ انہوں نے کہاکہ ٹیم کی باﺅلرز خاص طور پر انعم امین اور عثماویہ اقبال نے بہت اچھی باﺅلنگ کی اور مخالف ٹیموں کو زیادہ سکور نہیں کرنے دیا۔ بھارت اور ویسٹ انڈیز کی ٹیموں کو 100سے کم سکور پر آﺅٹ کیا انہوں نے کہاکہ ہار جیت کھیل کا حصہ ہے تاہم کھلاڑیوں نے گراﺅنڈ پر بھرپور محنت کی۔ انہوں نے کہا کہ مجموعی طور پر ٹیم کی کارکردگی بہتر رہی۔ ویمن ٹیم میں کسی قسم کے اختلافات نہیں ہیں۔ ٹیم کی بیٹنگ کو مزید بہتر بنانا ہوگا۔ پی سی بی نے ہماری بہت حوصلہ افزائی کی جس کی وجہ سے ٹیم کو بہت اعتماد ملا۔ انہو ں نے کہا کہ سانحہ گلشن پارک پر ہم سب بہت دکھی ہیں۔