- الإعلانات -

پی سی بی نے کرکٹرز کی تنخواہوں میں کٹوتی کا امکان مسترد کر دیا

 پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے کرکٹرز کی تنخواہوں میں کٹوتی کا امکان مسترد کر دیا ہے۔ منگل کو اپنے ایک ویڈیو بیان میں چیئرمین احسان مانی نے کہا کہ ملک کے انٹرنیشنل کرکٹرز ہوں یا ڈومیسٹک سب ہمارے سٹیک ہولڈر ہیں، ان کے مفادات کا تحفظ کریں گے، تنخواہوں میں کوئی غیر معمولی کٹوتی نہیں کی جائے گی، نئے کنٹریکٹ پالیسی کے مطابق دیئے جائیں گے۔احسان مانی نے کہا کہ سٹاف کی چھانٹی کا بھی کوئی ارادہ نہیں، سابق کرکٹرز کو پنشن دینے سمیت ہر ممکن مدد کرتے رہے ہیں، اس بار بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ پی سی بی کے اخراجات میں کمی ضرورکرنا ہو گی اس کیلئے مناسب طریقہ کار اختیار کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے دوران ریٹائرڈ کرکٹرز کی پنشن اور گھریلو کرکٹرز کے معاہدے بھی برقرار رہیں گے۔ کرکٹ پر بات کرتے ہوئے احسان مانی نے کہا کہ ہمارے پاس 2023ء تک کرکٹ میں انگلینڈ، آسٹریلیا، نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی افریقہ کے خلاف میچز بھی ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس اچھی سیریز آ رہی ہے لیکن ان کی مارکیٹنگ کرنا ایک چیلنج ہے۔ اس وقت کھیلوں کے نشریاتی ادارے بہت زیادہ پریشانی سے دوچار ہیں کیونکہ ان پر بہت زیادہ اقتصادی دباؤ ہے۔ احسان مانی نے کہا کہ چاہے ہم بھارت کے خلاف سیریز کھیلتے ہیں یا نہیں، ہماری منصوبہ بندی اس طرح ہو گی جیسے ہم ان کے خلاف نہیں کھیل رہے ہیں