- الإعلانات -

شعیب اختر نے مکی آرتھر کو ازخود 8 ماہ کی ڈیڈ لائن دے دی

نئے ہیڈ کوچ اس عرصے میں پاکستان ٹیم کی کارکردگی میں بہتری نہ لاسکیں تو گھر واپس لوٹ جائیں
میں پر امید ہوں نئے ہیڈ کوچ میں ہمارے کھلاڑیوں کا رویہ اور مائنڈ سیٹ تبدیل کرنے کی قابلیت ہے، سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے نئے کوچ مکی آرتھر کو ازخود 8 ماہ کی ڈیڈ لائن دے دی، نئے ہیڈ کوچ اس عرصے میں پاکستان ٹیم کی کارکردگی میں بہتری نہ لاسکیں تو گھر واپس لوٹ جائیں۔ان خیالات کا اظہارانہوںنے ایک انٹرویو میں کیا۔انہوںنے کہا کہ نئے کوچ مکی آرتھر کافی تجربہ کار اور وہ جنوبی افریقہ و آسٹریلیا جیسی بڑی ٹیموں کے ساتھ کام کرچکے، مگر میں سمجھتا ہوں کہ یہ جاننے کے لیے 8 ماہ بہت ہوں گے کہ وہ ٹیم پرفارمنس میں تبدیلی لاتے یا پھر اپنے سے پہلے والوں کی طرح گھر لوٹ جاتے ہیں، اس عرصے کے دوران ہم نے بہت اہم سیریز کھیلنی ہیں، اسی اندازہ ہوجائے گا کہ وہ ہمارے کرکٹ کھیلنے کے انداز کو نئی سمت دے پاتے ہیں یا پھر خود الوداع کہنے کا فیصلہ کرتے ہیں۔شعیب نے کہا کہ آرتھر میں ہمارے کھلاڑیوں کا رویہ اور مائنڈ سیٹ تبدیل کرنے کی قابلیت ہے اس لیے میں کافی پرامید ہوں۔ ڈسپلن کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ ان میں احساس ذمہ داری پیدا کرنا زیادہ اہم ہے، میرے وقت میں بھی کچھ کھلاڑی ڈسپلن کی خلاف ورزی کرتے تھے مگر میچ والے دن ان کی پوری توجہ صرف کھیل پر مرکوز ہوتی تھی۔دورہ انگلینڈ کیلئے ممکنہ کھلاڑیوں میں جگہ نہ بنا پانے والے عمر اکمل اور احمد شہزاد کے بارے میں شعیب اختر نے کہا کہ شروع میں ہم سب ان دونوں کو ٹیلنٹ کی وجہ سے سپورٹ کرتے، سراہتے اور حوصلہ دیتے تھے، مگر ان کے ساتھ دوسرے ممالک میں جن کھلاڑیوں نے کیریئر شروع کیا وہ اب ٹاپ پرفارمر بن چکے اور ان دونوں کا ابھی تک بہترین کھیل سامنے نہیں آیا ہے، دونوں کو اپنی ترجیحات پر نظر ثانی، کرکٹ پر پوری توجہ اور اپنے ٹیلنٹ سے انصاف کرنے کی ضرورت ہے۔