- الإعلانات -

شین واٹسن نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا

آسٹریلین آل راؤنڈر شین واٹسن نے پنڈلی کی انجری کے سبب ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا ہے۔

دورہ انگلینڈ میں ایک بار پھر انجری کا شکار ہونے والے شین وارن نے فوری طور پر ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا ہے۔

وہ ہفتے کو لارڈز میں انگلینڈ کے خلاف ہونے والے پانچ میچوں کی سیریز کے دوسرے میچ کے دوران انجری کا شکار ہوئے، اس میچ میں آسٹریلیا 64 رنز سے فتحیاب رہا۔

اپنے دس سالہ ٹیسٹ کیریئر میں وقتاً فوقتاً انجری کا شکار رہنے والے 34 سالہ آسٹریلین کھلاڑی نے آج صبح ہی اپنی ٹیم کے کھلاڑیوں کو اپنے اس فیصلے سے آگاہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ کرنا آسان نہیں تھا لیکن میں سمجھتا ہوں کہ یہ آگے بڑھنے کا صحیح وقت ہے تاہم میں ابھی ایک روزہ اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کھیلنے کیلئے پرامید ہوں۔

واضح رہے کہ شین واٹسن کو گزشتہ کچھ عرصے سے اپنی انجری اور فارم کی وجہ سے آسٹریلین ٹیم میں جگہ برقرار رکھنے میں شدید دشواری کا سامنا تھا۔

انہوں نے 59 ٹیسٹ میچوں میں آسٹریلیا کی نمائندگی کرتے ہوئے تین ہزار 731 رنز بنائے جبکہ 75 کھلاڑیوں کو بھی ٹھکانے لگایا۔

انہوں نے اپنی شاندار کارکردگی سے آسٹریلیا کو 14-2013 ایشز سیریز جتوانے میں اہم کردار ادا کیا تھا جبکہ وہ 2011 میں سال کے بہترین ٹیسٹ کھلاڑی کا آئی سی سی کا ایوارڈ جیتنے کا اعزاز بھی رکھتے ہیں جبکہ اس کے علاوہ انہیں دو بار ایلن بارڈر میڈل جیتنے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

جنوری 2005 میں پاکستان کے خلاف پہلا یسٹ کھیلنے والے واٹسن نے 23 سال کی عمر میں اپنی پہلی اننگ میں 31 رنز اسکور کرنے کے ساتھ ساتھ یونس خان کو اپنے کیریئر کی پہلی وکٹ بنایا تھا۔

واٹسن نے کہا کہ میں اپنے ٹیسٹ کیریئر میں وہ سب حاصل نہ کر سکا جس کا میں نے خواب دیکھا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ بحیثیت آل راؤنڈ میرا خواب تھا کہ میں بلے سے 50 سے زائد کی اوسط اور گیند سے 20 کے ہندسے میں اپنا ایوریج رکھ سکوں اور میں اس کے قریب بھی کچھ نہ کر سکا۔

لیکن انہوں نے کہا کہ مجھے فخر ہے کہ میں نے جتنی بھی کرکٹ کھیلی، اس میں اپنی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

یاد رہے کہ واٹسن ایک ماہ کے عرصے میں ریٹائر ہونے والے تیسرے آسٹریلین کھلاڑی ہیں جہاں اس سے قبل سابق کپتان مائیکل کلارک اور اوپنر کرس راجرز ایشز سیریز کے اختتام پر کرکٹ سے علیحدگی اختیار کر چکے ہیں۔