- الإعلانات -

پاکستان کے پاس عالمی نمبر ایک بننے کا موقع

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ٹیسٹ سیریز میں بہترین کارکردگی کی بدولت گرین شرٹس کو پہلی مرتبہ عالمی نمبر ایک بننے کا نادر موقع مل گیا ہے۔انگلینڈ کی سرزمین پر 14 جولائی سے شروع ہونے والی سیریز میں 3-0 یا 4-0 سے کامیابی کی صورت میں پاکستانی ٹیم عالمی نمبر ایک آسٹریلیا کو پیچھے چھوڑ کر پہلی مرتبہ یہ منصب سنبھال لے گی۔آئی سی سی کی عالمی درجہ بندی میں اس وقت آسٹریلیا 118 پوائنٹس کے ساتھ پہلے،ہندوستان 112 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے، پاکستانی ٹیم 111 پوائنٹس کے ساتھ تیسرے جبکہ چوتھے نمبر پر موجود انگلینڈ کے 108 پوائنٹس ہیں۔انگلش کنڈیشنز اور موسم کو دیکھتے ہوئے سیریز کیلئے میزبان انگلینڈ کو فیورٹ قرار دیا جا رہا ہے اور سیریز میں کلین سوئپ یا 3-0 سے کامیابی کی صورت میں اس کے پاس بھی عالمی نمبر دو بننے کا موقع ہے۔پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان سیریز کے ممکنہ نتائج اور پوائنٹس کی صورتھال کچھ ایسی ہو گی۔تاہم پاکستانی ٹیم بہترین کامیابی دکھا کر آئی سی سی رینکنگ کے اجرا کے بعد پہلی مرتبہ عالمی نمبرایک بن سکتی ہے۔اگر پاکستانی ٹیم سیریز میں 4-0 یا 3-0 سے کامیابی حاصل کرتی ہے تو اس کے پوائنٹس بالترتیب 119 اور 121 ہو جائیں گے اور وہ آسٹریلیا کو پیچھے چھوڑ کر عالمی نمبر ایک بن جائے گی۔تاہم یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ قومی ٹیم نے آج تک انگلینڈ کے خلاف 2-0 سے زیادہ مارجن سے ٹیسٹ سیریز نہیں جیتی اور اس نے یہ کارنامہ 1996 میں انجام دیا تھا۔سیریز میں 2-1 یا 3-1 سے کامیابی کی صورت پوائنٹس بالترتیب 114 اور 115 ہو جائیں گے اور یوں گرین شرٹس عالمی درجہ بندی میں دوسرے نمبر پر پہنچ جائے گی لیکن ساتھ ساتھ رینکنگ کا انحصار ویسٹ انڈیز اور ہندوستان کے درمیان نتائج پر بھی ہو گا جہاں بڑے مارجن سے کامیابی ہندوستان کو بھی عالمی نمبر ایک بنا دے گی۔