- الإعلانات -

یونس خان اور یاسر حمید کی شاندار بلے بازی لاہور کو شکست سے دوچار کردیا.

راولپنڈی: قومی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ میں یونس خان اور یاسر حمید کی شاندار بلے بازی کی بدولت ایبٹ آباد نے لاہور کو اپ سیٹ شکست سے دوچار کردیا جبکہ پشاور کی ٹیم نے مصباح الحق کی ٹیم فیصل آباد کو زیر کر کے قیمتی پوائنٹس حاصل کر لیے۔

راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے گئے پہلے میچ میں لاہور کے کپتان اظہر علی نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا جو تباہ کن ثابت ہوا۔

ایبٹ آباد کی ٹیم نے یاسر حمید اور یونس خان کی شاندار بلے بازی کی بدولت اسکور بورڈ پر 198 رنز کا بڑا مجموعہ سجایا۔

یاسر حمید نے 43 گیندوں پر دو چھکوں اور نو چوکوں کی مدد سے 67 اور یونس نے لگاتار دوسرے میچ میں نصف سنچری اسکور کرتے ہوئے 39 گیندوں پر آٹھ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 61 رنز بنائے، سجاد علی نے بھی 38 رنز کی کارآمد اننگ کھیلی۔

جواب میں اسٹار سے سجی لاہور وائٹس کی ٹیم ایبٹ آباد کی باؤلنگ کے سامنے شروع سے ہی بے بس نظر آئی اور کھلاڑی وقفے وقفے سے وکٹیں گنوا کر پویلین لوٹتے رہے۔

لاہور کی ناقص بیٹنگ کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ سات بلے باز ڈبل فیگر میں بھی داخل نہ ہو سکے جبکہ محمد حفیظ 31 رنز کے ساتھ سب سے کامیاب بیٹسمین رہے۔

لاہور کی پوری ٹیم 115 رنز پر ڈھیر ہو گئی اور ایبٹ آباد نے 83 رنز کے بھاری مارجن سے کامیابی حاصل کی۔

ایبٹ آباد کی جانب سے خالد عثمان نے تباہ کن باؤلنگ کرتے ہوئے پانچ وکٹیں حاصل کر کے میچ آف دی میچ کا ایوارڈ حاصل کیا جبکہ جنید خان اور یاسر شاہ نے دو دو وکٹیں حاصل کیں۔

ادھر بدھ کو ہی کھیلے گئے دوسرے میچ میں پشاور کی ٹیم نے قومی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق کی فیصل آباد کی ٹیم کو اپ سیٹ شکست دی۔

فیصل آباد نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور ایک موقع پر انہوں نے نویں اوور میں تین وکٹ کے نقصان پر 75 رنز بنا لیے تھے، اس موقع پر کپتان مصباح الحق کی وکت پر موجودگی کو دیکھتے ہوئے ایسا محسوس ہوتا تھا کہ شاید فیصل آباد کی ٹیم 150 سے زائد رنز کا مجموعہ اسکور بورڈ پر سجا لے گی۔

لیکن 94 کے مجموعے پر جب مصباح 34 رنز رنز بنا کر آؤٹ ہوئے تو بیٹنگ لائن میں بھونچال آگیا، مزید 13 رنز کے اضافے سے ٹیم مزید تین وکٹیں گنوا بیٹھی۔

اختتامی اوورز میں احسان عادل کی بہتر بیٹنگ کی بدولت فیصل آباد اسکور 133 رنز تک پہنچانے میں کامیاب رہا۔

جواب میں پشاور کی ٹیم بھی 52 رنز پر تین وکٹیں گنوا کر مشکلات سے دوچار ہو گئی تھی لیکن اس موقع پر افتخار احمد فیصل آباد کے باؤلرز کے سامنے ڈٹ گئے۔

انہوں نے لو اسکورنگ میچ میں 34 گیندوں پر دو چھکوں اور چار چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 51 رنز بنا کر اپنی ٹیم کو میچ میں پانچ وکٹ کی فتح سے ہمکنار کرا دیا جس پر انہیں میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا