- الإعلانات -

چٹاگانگ ٹیسٹ کے اہم دن سے قبل قومی ٹیم نے فلینڈر کو خیر باد کہہ دیا

پاکستان کرکٹ ٹیم نے بنگلادیشن کیخلاف چٹاگانگ ٹیسٹ کے اہم دن کے کھیل سے قبل بولنگ کنسلٹنٹ ورنن فلینڈر کو خیر باد کہہ دیا۔ پاکستان کو بنگلادیش کیخلاف پہلے ٹیسٹ میچ کے آخری روز 10 وکٹوں پر 93 رنز درکار ہیں۔

بنگلادیش کیخلاف پہلے ٹیسٹ میچ کے چوتھے روز بولنگ کنسلٹنٹ ورنن فیلنڈر کی قومی کرکٹرز کے ساتھ الوداعی بیٹھک ہوئی جس میں فلینڈر کی خدمات کو شاندار خراج تحسین پیش کیا گیا اور انہیں بھرپور انداز سے خیر باد کہا گیا۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کے کوچ ثقلین مشتاق نے اس موقع پر ٹیم کی پرفارمنس میں فلینڈر کے کردار پر روشنی ڈالی اور بتایا کہ فلینڈر نے 15 اکتوبر کو ورلڈ ٹی ٹوئنٹی سے ذرا پہلے ہمیں جوائن کیا اور آج 29 نومبر ہے اور یہ ہمیں چھوڑ کر جارہے ہیں۔

ثقلین نے بتایا کہ اس دوران ہم نے ٹی ٹوئنٹی کے 9 میچز کھیلے، 8 جیتے ایک ہارے، بولرز نے ان میچز میں 28 وکٹیں حاصل کیں اور تین بولرز مین آف دی میچ قرار پائے۔ ثقلین نے مزید بتایا کہ فلینڈر کے دور میں پاکستان نے ایک ٹیسٹ کھیلا جس کا کل آخری دن ہے اور امید ہے کم ہم وہ جیت جائیں گے، اس میچ میں پاکستانی بولرز نے 16 وکٹیں حاصل کیں جن میں سے دو بولرز نے 5، 5 وکٹیں بھی حاصل کیں۔

ثقلین نے کہا کہ فلینڈر کے دور میں پاکستانی بولرز نے مجموعی طور پر 44 انٹرنیشنل وکٹیں حاصل کیں۔ اس موقع پر فلینڈر نے کہا کہ مجھے پاکستان ٹیم میں گھر جیسا ماحول ملا، ابھی صرف 5 فیصد فرق آیا ہے، مزید بہترکرنا ہے، آپ سب کو چیلنج دے کر جارہا ہوں، یہاں سےمعیار بہتر کرنا ہے۔

خیال رہے کہ ورنن فلینڈر کو پہلے ٹیسٹ میچ کے اختتام پر یکم دسمبر کو روانہ ہونا تھا لیکن جنوبی افریقا میں کورونا وائرس کی نئی قسم اومی کرون سامنے آنے اور مختلف ممالک کی جانب سے جنوبی افریقا پر سفری پابندیاں عائد کیے جانے کی وجہ سے فلینڈر جلدی روانہ ہورہے ہیں۔

یاد رہے کہ ورلڈ کپ سے قبل مصباح الحق اور وقار یونس کے اچانک مستعفی ہوجانے پر پی سی بی نے عارضی طور پر ثقلین مشتاق کو کوچ، میتھیو ہیڈن کو بیٹنگ اور فلینڈر کو بولنگ کنسلٹنٹ مقرر کیا تھا۔ اب پی سی بی قومی کرکٹ ٹیم کے لیے مستقل کوچ کی تلاش میں ہے۔