- الإعلانات -

دوسری اننگز میں سنچری سے محروم ہوکر بھی عابد علی نے اعزاز حاصل کر لیا

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی عابد علی بنگلادیش کے خلاف ٹیسٹ میچ کی دوسری اننگز میں سنچری نہ بنا سکے اور 91 رنز پر آؤٹ ہو گئے مگر اس کارکردگی نے انہیں حنیف محمد اور ظہیرعباس جیسے لیجنڈ کھلاڑیوں کے ریکارڈ کی فہرست میں شامل کر دیا۔

ٹوئٹر پر پاکستان کرکٹ بورڈ کے اکاؤنٹ پر پاکستان ٹیم کے ان 7 کھلاڑیوں کی ایک تصویر شیئر کی گئی ہے جو ٹیسٹ میچ میں ایک اننگز میں سنچری اور دوسری میں 90 سے زیادہ رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ اس فہرست میں پہلے نمبر پر پاکستانی کھلاڑی حنیف محمد موجود ہیں جنہوں نے 1964 کے دوران آسٹریلیا کے خلاف پہلی اننگز میں 104 اور دوسری میں 93 رنز بنائے۔

دوسرے نمبر پاکستانی کھلاڑی ظہیر عباس موجود ہیں جنہوں نے 1978کے دوران بھارت کے خلاف پہلی اننگز میں 176 اور دوسری میں 96 رنز بنائے۔ تیسرا نمبر پاکستانی کھلاڑی محسن خان کا ہے جنہوں نے 1982کے دوران بھارت کے خلاف پہلی میں 94 اور دوسری میں 101 رنز بنائے۔

چوتھے نمبر پر پاکستانی کھلاڑی سعید انور موجود ہیں جنہوں نے 1994 میں سری لنکا کے خلاف کھیلے جانے والے ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگز میں 94 اور دوسری اننگز میں 136 رنز بنائے۔ پانچویں نمبر پر پاکستانی کھلاڑی اور سابق کپتان یونس خان موجود ہیں جنہوں نے 2001 میں نیوزی لینڈ کے خلاف کھیلے جانے والے ٹیسٹ میچ میں پہلے 91 اور پھر 149 رنز بنائے۔

چھٹے نمبر پر محمد حفیظ کا نمبر ہے جنہوں نے 2014 میں نیوزی لینڈ کے خلاف پہلی اننگز میں 96 اور دوسری اننگز میں 101 رنز بناکر سنچری مکمل کی۔ اب اس فہرست میں عابد علی بھی شامل ہو گئے ہیں جو بنگلادیش کے خلاف پہلے میچ کی پہلی اننگز میں سنچری اسکور کرنے کے بعد دوسری اننگز میں 91 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔