- الإعلانات -

محمد عامر دنیا کے بہترین فاسٹ باؤلرز میں سے ہیں۔ آئن پونٹ

سابق انگلش کرکٹر اور فاسٹ باؤلنگ مکینکس کے ماہر آئن پونٹ نے محمد عامر کو دنیا کے بہترین فاسٹ باؤلرز میں سے قرار دیتے ہوئے کہا ہیے کہ ان کا ایکشن عظیم پاکستانی فاسٹ باؤلر وسیم اکرم سے کافی بہتر ہے۔انہوں نے کہا کہ عامر کا ایکشن بہت شاندار اور مضبوط ہے جو گیند ریلیز کرتے ہوئے مستقل مزاجی میں ان کیلئے مددگار ثابت ہوتا ہے.انہوں نے پاک پیشن کیلئے اپنے بلاگ میں مزید کہا کہ ہم سب ایسے باؤلرز کی تلاش میں رہتے ہیں جو ایسا کر سکتے ہوں کیونکہ اس سے انجریز کا خطرہ کم ہونے کے ساتھ ساتھ صحیح اور تیز باؤلنگ کے امکانات بڑھ جاتے ہیں، عامر کی اسپیڈ 87 میل فی گھنٹہ ہے جو بلے بازوں کیلئے مسائل پیدا کرنے کیلئے کافی ہے اور وہ اس رفتار میں مزید اضافہ بھی کر سکتے ہیں۔ایسیکس کی نمائندگی کرنے والے اور اپنی جاندار تھرو کیلئے مشہور پونٹ نے کہا کہ عامر بہت خوش قسمت ہیں کہ گیند کراتے ہوئے کلائی کی شاندار پوزیشن بہت اچھی ہوتی ہے۔سابق انگلش کرکٹر نے کہا کہ عامر ابھی صرف 23 سال کے ہیں اور ابھی ان کے کیریئر کے بہترین سال ان کے سامنے ہیں لیکن حقیقتاً ان کی کلائی کی پوزیشن انہیں ایک شاندار باؤلرز بناتی ہے جس کی بدولت وہ تیز رفتاری کے ساتھ گیند کو سوئنگ کر سکتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ عامر کا واضح طور پر وسیم اکرم سے موازنہ کیا جائے گا اور آگے چل کر کسی موقع پر یہ ناگزیر ہو گا کہ وسیم عامر کی رہنمائی کریں۔پونٹ کا ماننا ہے کہ عامر میں تمام تر صلاحیتیں موجود ہیں کہ وہ وسیم جیسے شاندار باؤلر بن سکیں کیونکہ ان کا باؤلنگ ایکشن وسیم اکرم سے کافی بہتر ہے، بحیثیت فاسٹ سوئنگ باؤلر کے نا کی تکنیک کافی بہتر ہے، عامر کو یہ اگر کوئی چیز روک سکتی ہے تو وہ خود ہیں۔

2010 کے بدنام زمانہ اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں ملوث عامر کو آئی سی سی نے سلمان بٹ اور محمد آصف کے ساتھ 2 ستمبر سے ہر طرز کی کرکٹ کھیلنے کی اجازت دے دی ہے تاہم پاکستان کرکٹ بورڈ نے ان تینوں کی عالمی کرکٹ میں فوری واپسی کے امکانات کو یکسر رد کردیا ہے۔