- الإعلانات -

سابق کپتان سرفراز احمد کی جانب سے چیمپیئنز ٹرافی 2017ء کی یادیں تازہ

چیمپئنز ٹرافی2017 ء فائنل میں بھارت سے تاریخی فتح حاصل کیے آج پانچ برس مکمل ہوگئے۔ اس حوالے سے پاکستان کرکٹ بورڈ نے سابق کپتان سرفراز احمد کی ویڈیو ریلیز کی ہے۔ ٹوئٹر پر جاری ویڈیو بیان میں سرفراز احمد نے بتایا کہ آج پاکستان ٹیم کو چیمپئنز ٹرافی جیتے پانچ سال ہوگئے، اس حوالے سے بہت زیادہ یادیں ہیں۔

سرفراز احمد نے کہا کہ اس جیت کو حاصل کرنے کے لیے سب کھلاڑیوں نے عمدہ ترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ یاداشت کا آغاز کرتے ہوئے کہا کہ چیمپئنز ٹرافی میں ہمارے سفر کا آغاز بھارت کے خلاف مقابلے سے ہوا، میچ کے بعد ہم سب مل بیٹھ کر گفت و شنید کی، ٹیم کے بڑے کھلاڑیوںنے کافی مشورے دیے،مختلف جوڑیوں اور ہمارے رویے پر بات ہوئی کہ ہم یہاں سے آگے کیسے جیت سکتے ہیں۔

سابق کپتان نے بتایا کہ ہم نے یہی فیصلہ کیا کہ اگر آگے مسلسل جیتنا ہے تو مثبت سوچ اور کمبی نیشن کے ساتھ میدان میں داخل ہونا ہے، کپتان کے طور پر میں نے آخری بات یہی کی کہ اب سفید کوٹ میں پاکستان جانا ہے۔ فائنل کو یاد کرتے ہوئے سرفراز احمد نے کہا کہ پہلے میچ کے مقابلے میں اس میں، میں بہت زیادہ بااعتماد تھا، ہمارا مومنٹم زبردست تھا، فخر زمان نے شاندار اننگز کھیلی،کیونکہ جب آپ اچھا سوچتے ہو توضرور اچھا ہوتا ہے۔ سابق کپتان نے بتایا کہ فخر زمان نے خواب میں دیکھا کہ وہ آؤٹ ہو گیا اور نوبال ہوگئی، اگلے دن ایسے ہی ہوا اور فخر زمان نوبال پر آؤٹ ہوئے اور پھر انہوں نے سو رنز سے زائد بنائے۔

سرفراز نے سلسلہ آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ اول اول اظہر علی نے مومنٹم دیا، پھر فخر زمان اور دوسرے کھلاڑی اسے آگے لے کر چلے، سب بلے بازوںنے اپنا اپناکردار ادا کیا ،جبکہ گیند بازی ی طرف محمد عامر نے بہترین آغاز دیا، میں سمجھتا ہوں جو اسپیل محمد عامر نے کیا ویسا بہت کم دیکھنے کو ملتا ہے۔

سابق کپتان کے مطابق چیمپئنز ٹرافی جیتنا ہمارے لیے یادگار ترین ہے،کوچ مکی آرتھر نے ٹیم کو بہت اچھا چلایا، پہلے مقابلے کے بعد سے ہر کسی نے ایک دوسرے کا ساتھ دیا۔