- الإعلانات -

فیفا کے سابق نائب صدر کرپشن میں ملوث

فٹبال کی عالمی گورننگ باڈی فیفا نے اپنے سابق نائب صدر جیک وارنر کو کرپشن میں ملوث ہونے پر فٹبال سرگرمیوں میں حصہ لینے پر تاحیات پابندی عائد کردی ہے۔ٹرینیڈاڈ سے تعلق رکھنے والے 72 سالہ وارنر کیریبیئن اینڈ نارتھ اینڈ سینٹرل امریکن فٹبال کے سربراہ تھے لیکن 2011 میں اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے تھے۔وہ ان دنوں کرپشن پر امریکی الزامات سے نبرد آزما تھے اور انہوں نے ملین ڈالرز کی رشوت لینے کے الزامات کی سختی سے تردید کی تھی۔فٹبال کی عالمی گورننگ باڈی کے مطابق وارنر ماضی میں کئی بدعنوانیوں میں مسلسل ملوث رہے اور یہ سرگرمیاں دہراتے رہے۔

2018 اور 2022 کے فیفا ورلڈ کپ کی میزبانی کی بولی کے حوالے سے فیفا کی تحقیقات جاری ہیں اور اس سلسلے میں وارنر کے کردار پر جنوری 2015 میں نظرثانی کی جائے گی۔منگل کو فیفا کی جانب سے بیان میں کہا گیا کہ وارنر کئی مرتبہ فیفا کے اخلاقی قواعد و ضوابط کو توڑنے کے مرتکب قرار پائے۔گزشتۃ ہفتے سوئس حکام نے 2005 میں فیفا اور وارنر کے درمیان ٹی وی رائٹس کی مد میں غیرموزوں معاہدے کرنے پر فیفا کے صدر سیپ بلاٹر کے خلاف کارروائی کا آغاز کیا تھا۔وارنر پر الزام ہے کہ وہ دو دہائیوں تک ورلڈ کپ کی بولی سمیت متعدد مواقعوں کرپشن و دیگر غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث رہے۔