- الإعلانات -

احمد شہزاد آوٹ ہو کر بھی آوٹ نہ ہوئے

کرکٹ کی تاریخ کا ایک انوکھا واقعہ اس وقت پیش آیا جب بی پی ایل کے ایک میچ میں پاکستانی بلے باز احمد شہزاد آوٹ ہو کر بھی آوٹ نہ ہوئے۔ ہوا کچھ کہ ایسا کمیلا وکٹورینز کی طرف سے کھیلنے والے احمد شہزاد رن لینے کیلئے بڑھے تو ان کے راستے میں دوسری ٹیم کے کھلاڑی ڈلشان آگئے جس کی وجہ سے وہ گر پڑے۔ اسی دوران دوسرا کھلاڑی بھی رن لینے کیلئے احمد شہزاد کی کریز میں آچکا تھا۔دونوں کھلاڑیوں کے ایک اینڈ پر ہونے کی وجہ سے ایک کھلاری آوٹ ہوا۔ری پلے کے مطابق احمد شہزاد کریز سے باہر تھے۔ اسطرح وہ آوٹ تھے لیکن انہوں نے ایمپائر سے احتجاج کیا کہ ان کو گرایا گیا ہے جس پر معاملہ تیسرے ایمپائر کے پاس گیاجس نے ان کو ناٹ آوٹ قرار دیا۔ اس سارے واقعہ میں حیران کن پہلو یہ ہے کہ یاتو اس بال کو ڈیڈ بال قرار دیا جاتا یا احمد شہزاد کو رن آوٹ دیا جاتا لیکن نہ تو بال ڈیڈ دی گئی نہ آوٹ دیا گیا حالانکہ قانون ہے کہ اگر ایسا کوئی واقعہ ہو جائے تو بال ہی ڈیڈ دی جاتی ہے لیکن بنگلہ دیش پریمیئر لیگ میں پہلے سے ہی ناقص ایمپائرنگ کے واقعات میں ایک اور واقعہ کا اضافہ ہوگیا۔