- الإعلانات -

ممنوعہ ادویات کا استعمال، یاسر شاہ بڑی مصیبت میں مبتلا

آئی سی سی نے یاسر شاہ کا ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر انہیں معطل کر دیاہے ۔ ذرائع کے مطابق انگلینڈ کے خلاف ون ڈے میچ میں 13 نومبر کو یاسر شاہ کا ڈوپ ٹیسٹ لیا گیا تھا۔ جس میں یہ سامنے آئی ہے کہ یاسر شاہ نے کورتھیلیڈون نامی ایک دوا کا استعال کیا جو کہ واڈا قوانین کے تحت ممنوع ہے۔پاکستان کے مایہ ناز لیگ اسپنر یاسر شاہ کو پاکستان کی جانب سے ٹیسٹ کرکٹ میں تیز ترین 50 وکٹیں لینے کا اعزاز حاصل ہے۔یاسر شاہ نے اپنے ٹیسٹ کیرئر کا آغاز 22 اکتوبر 2014 کو کیا وہ اپنے ٹیسٹ کیرئر میں ابھی تک چھہتر وکٹیں حاصل کر چکے ہیں ، کھلاڑی آئی سی سی رینکنگ میں چوتھے نمبر پر موجود ہیں۔یاسر شاہ پہلے لیگ اسپنر ہیں جنہیں پہلے دس ٹیسٹ میچز میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے کا اعزاز حاصل ہوا ، گرین شرٹس کے اسٹار اسپن باو¿لر نے اپنے ایک روزہ کیرئر کا آغاز ستمبر 2011 میں کیا تھا ، یاسر شاہ قومی ٹیم کو بہت سی فتوحات دلوا چکے ہیں اور اپنی شاندار کارکردگی کی وجہ سے پوری دنیا میں نام کما چکے ہیں۔واضح رہے کہ یاسر کے ڈوپ ٹیسٹ کا دوسرا نمونہ مثبت آنے کی صورت میں ان کو آئی سی سی کی طرف سے لمبی پابندی کا بھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ تاہم آئی سی سی کی طرف سے ابھی تک باقاعدہ سزا کا اعلان نہیں کیا گیا۔کرکٹ مبصرین نے یاسر شاہ کی معطلی کو پاکستان کی کرکٹ کے لیے انتہائی افسوسناک خبر قرار دیا ہے۔