- الإعلانات -

ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں قومی ٹیم کی نمائندگی کے لیے پُرامید”سعید اجمل”

اسلام آباد: پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز اسپنر سعید اجمل کا کہنا ہے کہ وہ پاکستان سپر لیگ(پی ایس ایل) میں اپنی بہترین کارکردگی پیش کرکے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں قومی ٹیم کی نمائندگی کے لیے پُرامید ہیں۔

سعید اجمل نے 2009 کے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں اپنی بہترین کارکردگی کے ذریعے پاکستان کو عالمی چمپیئن بننے میں کلیدی کردار ادا کیا تھا جبکہ غیر قانونی باؤلنگ ایکشن پر 5 ماہ کی پابندی کے بعد ایکشن درست کرکے گزشتہ سال فروری میں بنگلہ دیش کے خلاف سیریز میں ٹیم میں واپس آئے تھے لیکن ان کی کارکردگی میں واضح فرق نظر آیا تھا۔

وہ بنگلہ دیش کے خلاف دو ون ڈے میچوں میں صرف ایک وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے تھے جبکہ اس دوران انگلیند کی کاؤنٹی ورسسٹر شائر کے لیے 55 میچوں میں صرف 16 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

سعید اجمل پی ایس ایل میں اسلام آباد یونائیٹڈ کی نمائندگی کریں گے. انھوں نے ٹیم کی افتتاحی تقریب کے دوران خبررساں ادارے کو انٹرویو میں کہا کہ وہ تیکنیکی خامیوں پر قابو کرنے کے لیے کام کرچکے ہیں اور پرانا دبدبہ حاصل کرلیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ” مجھے اچھا پلیٹ فارم مل گیا ہے اور اپنے مقاصد پر کام کررہاہوں، اور پی ایس ایل میں پرانا سعید اجمل نظر آئے گا”۔

ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کے سرفہرست باؤلرز میں شامل سعید اجمل نے کہا کہ”ورلڈ کپ اس کے بعد ہے اور میں یہاں بہترین کھیل پیش کرکے اپنی دستیابی ثابت کرنا چاہتاہوں”۔

آئی سی سی کی جانب سے 2014 میں مشکوک باولنگ ایکشن کی پاداش میں پابندی سے قبل سعید اجمل ون کرکٹ کی عالمی درجہ بندی میں پہلے نمبر پر تھے جبکہ ٹیسٹ میں بھی ان کی کارکردگی شاندار تھی جبکہ انگلینڈ کے خلاف 3 ٹیسٹ میچوں میں انھوں نے یاد گار 24 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

انھوں نے کہا کہ” جب میں بنگلہ دیش کے خلاف بین الاقوامی کرکٹ میں واپس آیا تھا تو اس وقت میری میچ پریکٹس نہیں تھی. مجھے کچھ وقت درکار تھا جو کہ اب مجھے ملا ہے اور میں خود کو ثابت کرنے کے قابل ہوا ہوں”۔

ان کا کہنا تھا کہ” بہت سے مسائل تھے، میرا بازو زیادہ گررہا تھا جس پر میں کام کرچکا ہوں جبکہ اپنے اہم ہتھیار اور دوسرا کے ساتھ ساتھ آرم بال پر بھی گرفت حاصل کرلی ہے”۔ .

سعید اجمل کے دعوؤں کے باوجود اب تک یہ واضح نہیں ہے کہ وہ پی ایس ایل میں ٹیم کے ساتھی اسپنر ویسٹ انڈیز کے سیموئل بدری کے مقابلے میں کھیلنے کے لیے جگہ پاسکیں گے یا نہیں جبکہ بدری اس وقت ٹی ٹوئنٹی درجہ بندی میں نمبر ایک باؤلر ہیں تاہم یاسر شاہ کے ڈوپنگ کے مسئلے پر پابندی کے بعد سعید اجمل کی قومی ٹیم میں واپسی کے لیے دروازے بھی کھلے ہیں۔