کھیل

سابق زمبابوین کرکٹ چیف پر 4 سال کی پابندی عائد

زمبابوین کرکٹ بورڈ کے سابق چیئرمین ولسن مناسے کیلیے ٹیم پاکستان بھیجنا جرم بن گیا، اسپورٹس اینڈ ریکریشن کمیشن نے ان پر 4 برس کیلیے پابندی عائد کردی۔ ولسن نے اپنے خلاف فیصلے کو جانبدارانہ اور غیرمنصفانہ قرار دیتے ہوئے چیلنج کرنے کا اعلان کردیا۔ یاد رہے کہ زمبابوین کرکٹ ٹیم نے مئی میں پاکستان کا دورہ کیا، اس وقت بھی حکومتی اسپورٹس کمیشن نے بورڈ پر بلااجازت ٹیم بھیجنے کا الزام عائد کیا تھا، اب اسی جرم میں اس وقت کے زمبابوین کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ولسن مناسے کو معطل کردیا گیا، وہ ایک سینئر وکیل بھی ہیں، اگست میں ان کی جگہ تاوینگوا موکولانی نے زمبابوین کرکٹ کی باگ ڈور سنبھالی تھی۔ مناسے کا کہنا ہے کہ ایس ار سی نے صرف مجھے ہی ٹیم کو بھیجنے کا ذمہ دار قرار دیا جب کہ یہ بورڈ کا متفقہ فیصلہ تھا، اسی نے کھلاڑیوں اور افیشلز کا تعین کیا اور اوزیس بوئیٹ کو دستے کا سربراہ بنایا، اس کے باوجود سارا الزام میرے سر ڈالنا غیرمنصفانہ ہے، مجھے چارج شیٹ پیش کی گئی نہ ہی دفاع کا موقع فراہم کیا گیا، اس لیے میں نے اسے انتظامی عدالت میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سلمان بٹ اور آصف کی واپسی سے متعلق اہم فیصلہ ہوگیا

سلمان بٹ اور فاسٹ باو¿لر محمد آصف کو ڈومیسٹک ون ڈے ٹورنامنٹ میں شرکت کی اجازت ملنے کا امکان پیدا ہوگیا ہے۔ ذرائع کے مطابق دونوں کھلاڑی آج کل اپنی سزائیں مکمل کرنے کے بعد کرکٹر کو فکسنگ سے محفوظ رکھنے کے لیے لیکچرز دے رہے ہیں ، پی سی بی حکام کا کہنا ہے کہ دونوں کھلاڑیوں کو جنوری 2016ءمیں شیڈول ملکی ڈومیسٹک ون ڈے ٹورنامنٹ میں شرکت کی اجازت دی جاسکتی ہے اور اس ضمن میں تیاری کے لیے سلمان بٹ اور محمدآصف قائد اعظم ٹرافی کے اگلے راو¿نڈ میں واپڈا کی جانب سے ان ایکشن ہوسکتے ہیں۔

ناقص کارکردگی ، حفیظ نے ذمہ داری مصباح الحق پر ڈال دی

محمد حفیظ نے ون ڈے ٹیم کے ناقص کھیل کی ذمہ داری مصباح الحق پر ڈال دی، ان کا کہنا ہے کہ سینئر کرکٹر ایک روزہ فارمیٹ میں بطور کپتان ناکام ثابت ہوئے، اس وقت ایک روزہ ٹیم کی جو حالت ہے اس کے ہم سب بھی قصوروار ہیں.تفصیلات کے مطابق محمد حفیظ نے ایک روزہ فارمیٹ میں ٹیم کی خراب ترین کارکردگی کا پوسٹ مارٹم کرتے ہوئے مصباح سے دوستی کو پس پشت ڈال دیا۔ نھوں نے کہا کہ ایک روزہ ٹیم کی یہ حالت راتوں رات نہیں ہوئی، کوچز، مختلف سلیکشن کمیٹیز، مصباح الحق جیسے کپتان اورتمام کھلاڑی اس کے ذمہ دار ہیں۔
اگرچہ مصباح الحق ٹیسٹ کرکٹ میں بہتر قیادت کررہے ہیں مگر ون ڈے فارمیٹ میں وہ ایسا نہیں کرپائے، ہمیں اپنی سلیکشن کو بھی بہتر کرنے کی ضرورت ہے، غیرمستقل مزاجی خرابیوں کا باعث بنتی ہیں، ٹیسٹ ٹیم مستحکم اوراسی لیے کامیابیاں حاصل کررہی ہے لیکن ون ڈے اسکواڈ کے ساتھ ایسا نہیں ہو سکا، اگر پلیئرز کو مستقل ان آو¿ٹ کیا جائے تو کوئی کیسے بے خوف کرکٹ کھیل پائے گا، اگر آپ کسی کو منتخب کرتے تو پھر صلاحیتوں کے اظہار کیلیے مناسب وقت بھی دیں۔کوچنگ اسٹاف کو بھی اس سلسلے میں واضح اپروچ اختیار کرنا چاہیے۔ غیرقانونی بولنگ ایکشن کے حوالے سے حفیظ نے کہا کہ میں محسوس کرتا ہوں کہ اس حوالے سے حالیہ مہم الجھن زدہ ہے، مخصوص بولرز کو نشانہ بنانے کے بجائے انٹرنیشنل کرکٹ میں موجود فاسٹ، سلو، رائٹ آرم، لیفٹ آرم سب بولرز کو اس ٹیسٹ سے گزرنا چاہیے، کلیئر ہونے کے بعد ہی انھیں ٹاپ لیول پر بولنگ کی اجازت دینا مناسب رہے گا۔

پی ایس ایل میں کھیلنے کیلئے بھارتی کھلاڑی بھیج سکتے ہیں، راجیو شکلا

لاہور :آئی پی ایل کے چیئرمین راجیو شکلا نے کہاہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کہے تو پاکستان سپر لیگ کیلئے بھارت کھلاڑیوں کو بھیج سکتے ہیں۔ اے آر وائے نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیاہے کہ انگلینڈ اور آسٹریلوی کرکٹ بورڈ بھارتی کرکٹ بورڈ پر پاکستان سپر لیگ میں کھیلنے کیلئے بھارتی کھلاڑیوں کو بھیجنے کیلئے دباوڈال رہاہے جبکہ بھارتی کھلاڑیوں نے بھی پی ایس ایل میں کھیلنے کی خواہش کا اظہار کر دیاہے۔دوسری جانب راجیوشکلا نے بھی پاکستان سپر لیگ میں بھارتی کھلاڑی بھیجنے سے متعلق پیشکش کرتے ہوئے کہاہے کہ اگر پی سی بی چاہے تو ہم کھلاڑی بھیج سکتے ہیں۔

محمد عامر کیلئے بڑی خوشخبری

شہریار خان نے محمد عامر کو ٹیم میں شامل کرنے کا معاملہ سلیکشن کمیٹی کے سپرد کردیا ہے جو محمد عامر کو ٹیم میں شامل کرنے کیلئے غور کررہی ہے۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق لاہور میں پی سی بی کے ہیڈکوارٹر میں چیف سلیکشن کمیٹی ہارون رشید کی سربراہی میں اجلاس جاری ہے جس میں محمد عامر کو ٹیم میں شامل کرنے پرغور کیاجارہاہے پاک بھارت سیریز اگر ہوئی تو محمد عامر کو موقع دیاجائے گا ورنہ نیوزی لینڈ کیخلاف سیریز میں محمد عامر کھیل سکتے ہیں۔ فروری 2016 میں شارجہ اور ابوظہبی میں ہونیوالی پاکستان سپر لیگ میں بھی محمد عامر کو شامل کیاجاسکتا ہے۔ یا د رہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے متعدد کھلاڑی محمد عامر کو ٹیم میں شامل کرنے کی مخالفت کرچکے ہیں ، جن میں محمد حفیظ سرفہرست ہیں ، جنہوں نے بنگلادیش پریمیئر لیگ سے معاہدہ ختم کردیا تھا۔ پی سی بی بھی اس حوالے سے فکر مند ہے۔

یاسر شاہ نے اپنے گہرے دوست کوگھربھیج دیا

ڈھاکہ: یہ امیدنہ تھی ،یاسر شاہ نے اپنے گہرے دوست کوگھربھیج دیا۔بنگلہ دیش پریمیرلیگ میں ڈھاکہ ڈائنامائٹس کی نمائندگی کرنے والے پاکستانی لیگ سپنر یاسر شا ہ نے اپنے ہی دوستوں پرقیامت برپاکردی۔ چٹاگانگ میں 29سالہ یاسر شاہ کی ٹیم کومیلا وکٹورینز کے مقابل آئی جس میں ان کے ہم وطن احمد شہزاد اور شعیب ملک شامل تھے۔ یاسر شاہ کو مخالف اوپنر احمد شہزاد کے سامنے باو¿لنگ کرنے کا موقع نہ مل سکا کیوں کہ وہ جلدی آو¿ٹ ہوکر پوویلین لوٹ چکے تھے تاہم انہوں نے ہم وطن آل راونڈر شعیب ملک کی وکٹ حاصل کرلی جو انہیں آگے بڑھ کر زوردار شاٹ لگانے کی کوشش میں لانگ آف پر کیچ آوٹ ہوگئے۔

پاکستان کے تین کھلاڑ یوں کو گرین سگنل مل گیا

دبئی:انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے سال 2015 کی ٹیسٹ اور ون ڈے ٹیموں کا اعلان کردیا، پاکستان کے تین کھلاڑی ٹیسٹ ٹیم میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوئے البتہ ون ڈے ٹیم میں کوئی پاکستانی کھلاڑی شامل نہیں ہو سکا.ٹیسٹ ٹیم کے کپتان الیسٹرکک جبکہ ون ڈے کے کپتان جنوبی افریقہ کے اے بی ڈی ولیئرز ہوں گے،آئی سی سی کی کرکٹ کمیٹی کے چیئرمین اور ہندوستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان انیل کمبلے کی سربراہی میں آئی سی سی نے سال 2015 کی ٹیسٹ اور ون ڈے ٹیموں کا اعلان کیا جس میں ورلڈکپ کا فائنل کھیلنے والے نیوزی لینڈ کے ٹرینٹ بولٹ اورآسٹریلیا کے کپتان اسٹیو اسمتھ کے علاوہ انگلینڈ کے جو روٹ کو ٹیسٹ اور ون ڈے دونوں ٹیموں میں شامل کیا گیا ہے۔ٹیموں میں شامل کھلاڑیوں کا انتخاب 18 ستمبر2014 سے 13 ستمبر 2015 کے دوران کی کارکردگی کی بنیاد پر کیا گیاہے۔آئی سی سی کی سلیکشن کمیٹی ویسٹ انڈیز کے سابق فاسٹ باو¿لر آئن بشپ، انگلینڈ کے سابق بلے باز مارک بوچر، آسٹریلوی خواتین کرکٹ ٹیم کی سابق کپتان بلینڈا کلارک اور دی ہندو اوراسپورٹس اسٹار کے ڈپٹی ایڈیٹر جی وسواناتھ پر مشتمل تھی۔آئی سی سی کی ٹیسٹ ٹیم میں پاکستان، انگلینڈ اور آسٹریلیا کے تین تین کھلاڑیوں کو شامل کیا گیا ہے۔آئی سی سی ٹیسٹ ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہوگی۔ڈیوڈ وارنر(آسٹریلیا)، الیسٹرکک (کپتان)، کین ولیمسن(نیوزی لینڈ)، یونس خان(پاکستان)، اسٹیون اسمتھ(آسٹریلیا)، جو روٹ(انگلینڈ)، سرفرازاحمد(پاکستان، وکٹ کیپر)، اسٹورٹ براڈ(انگلینڈ)، ٹرینٹ بولٹ(نیوزی لینڈ)، یاسر شاہ(پاکستان)، جوس ہیزلووڈ(آسٹریلیا) اور ہندوستان کے روی چندرن ایشون کو بارھویں کھلاڑی کے طورپر شامل کیا گیاہے۔الیسٹر کک کو ٹیم کاکپتان مقررکیا گیا ہے جبکہ انگلینڈ جو روٹ اور فاسٹ باو¿لر اسٹورٹ براڈ کو بھی شامل کیا گیاہے، اسٹورٹ براڈ اس سے قبل چار دفعہ 2009 ، 2011،2012 اور 2014 میں آئی سی سی ٹیسٹ ٹیم میں منتخب ہوئے تھے جبکہ الیسٹرکک ٹیسٹ ٹیم میں چوتھی دفعہ شامل ہوئے ہیں اور بطور کپتان 2013 کے بعد دوسری دفعہ کپتان مقرر ہوئے ہیں۔آسٹریلیا کے کپتان اسٹیون اسمتھ ور ڈیوڈ وارنر مسلسل دوسری دفعہ اس ٹیم کا حصے بنے ہیں۔آئی سی سی کی ون ڈے ٹیم میں کسی پاکستانی کھلاڑی کو شامل نہیں کیا گیا ہے جبکہ سری لنکا کے سابق کپتان کمارسنگاکارا جگہ بنانے میں کامیاب ہوئے ہیں۔اے بی ڈی ولیئرز کی قیادت میں آئی سی سی کی ون ڈے ٹیم ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے: تلکارتنے دلشان(سری لنکا)، ہاشم آملہ(جنوبی افریقا)، کمارسنگاکارا(سری لنکا، وکٹ کیپر، اے بی ڈی ولیئرز(کپتان)، اسٹیون اسمتھ(آسٹریلیا)، روس ٹیلر(نیوزی لینڈ)، ٹرینٹ بولٹ(نیوزی لینڈ)، محمد شامی(ہندوستان)، مچل اسٹآرک(آسٹریلیا)، مستفیض الرحمان(بنگلہ دیش)، عمران طاہر(جنوبی افریقا) جبکہ انگلینڈ کے جو روٹ 12ویں کھلاڑی ہوں گے۔

آسٹریلوی امپائر جان ورڈ میچ کے دوران گیند لگنے سے شدید زخمی ہوگئے

سڈنی:آسٹریلوی امپائر جان ورڈ ہندوستان کے ڈومیسٹک کرکٹ رانجی ٹرافی کے میچ کے دوران گیند لگنے سے شدید زخمی ہوگئے۔کرکٹ ویب سائٹ کرک انفو کے مطابق ہندوستان کی ریاست تامل ناڈو میں رانجی ٹرافی کے ایک میچ میں پنجاب کے بیٹسمین بریندر سرن نے حریف ٹیم تامل ناڈو کے خلاف بیٹنگ کرتے ہوئے گیند کو امپائر کے پاس سے نکالنے کی کوشش کی لیکن گیند امپائر جان وارڑ کے سر پر جالگی اور وہ گرانڈ پر گر پڑے۔

Google Analytics Alternative