کھیل

ٹیم نے غلطیوں سے سبق سیکھ لیا، سرفراز احمد

لندن: قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ ٹیم نے غلطیوں سے سبق سیکھ لیا اب بنگلا دیش کیخلاف بھرپور تیاری کیساتھ میدان میں اتریں گے۔

لندن میں ایکسپریس نیوز سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت کیخلاف میچ کے بعد تمام کھلاڑیوں کو اکٹھاکرکےبات کی کہ کھلاڑیوں اور منیجمنٹ کی بھرپور محنت کے باوجود کہاں غلطیاں کررہے ہیں؟ کہ بطور ٹیم اچھی پرفارمنس کا مظاہرہ نہیں کرپارہے،اپنے مسائل کا جائزہ لینے کے بعد سینئرز اور جونیئرز سب نے کہا کہ گزشتہ میچز میں جو ہوا، اس کو بھلا کر آئندہ میچز کیلیے نئے عزم کیساتھ میدان میں اتریں گے،اس کے بعد پاکستان نے بطور ٹیم بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے فتوحات حاصل کیں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ دوسری ٹیموں کے میچز کا نتیجہ ہمارے کنٹرول میں نہیں،ہماری توجہ اپنی پرفارمنس پر ہے،بنگلا دیش کیخلاف میچ سے قبل وقفہ ہونے کی وجہ سے تیاری کا اچھا موقع مل گیا، آخری میچ میں بھی جیت کا تسلسل برقرار رکھنے کی کوشش کریں گے۔

سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ انگلینڈ میں پرستاروں اور پاکستانی عوام کی سپورٹ سے کھلاڑیوں کے حوصلے بلند ہیں، امید ہے کہ بنگلا دیش کیخلاف میچ میں بھی ان کی حوصلہ افزائی برقرار رہے گی۔

ایک سوال پر سرفراز احمد نے کہا کہ حارث سہیل نمبر 5پر بیٹنگ کرتے ہوئے ٹیم کیلیے زیادہ بہتر پرفارم کرسکتے تھے،اس لئے خود بعد میں بیٹنگ کا فیصلہ کیا،مجھ سمیت کسی کے بھی بیٹنگ نمبر سے زیادہ ٹیم کے مفاد میں فیصلوں کی اہمیت ہے۔

سیمی فائنل میں رسائی؛ پاکستانی ٹیم کو راستے سے پتھر ہٹنے کا انتظار

لاہور: سیمی فائنل میں رسائی کیلیے پاکستان کی نگاہیں انگلینڈ ونیوزی لینڈ کے میچ پر مرکوز ہیں جب کہ بدھ کے روز میزبان ٹیم کی شکست راستے کا ایک پتھر ہٹا دے گی۔

انگلینڈ کی بھارت سے شکست پاکستان کی سیمی فائنل تک رسائی کے امکانات میں اضافہ کرسکتی تھی،مگر اتوار کو کھیلے جانے والے میچ میں ویرات کوہلی الیون کی ناکامی نے پوائنٹس ٹیبل کی صورتحال میں اگر مگر کا چکر بڑھا دیا۔

اس وقت دفاعی چیمپئن آسٹریلیا 8 میچز میں 14پوائنٹس کے ساتھ کوالیفائی کرنے والی واحد ٹیم اور جنوبی افریقہ کیخلاف غیر اہم میچ باقی ہے،پاکستان کے اس وقت 9 پوائنٹس اور بنگلہ دیش سے میچ ہونا ہے، 10پوائنٹس کے حامل انگلینڈ کو اپنے آخری مقابلے میں بدھ کو چیسٹرلی اسٹریٹ میں نیوزی لینڈ کا سامنا کرنا ہوگا۔

میزبان ٹیم کو شکست اور پاکستان جمعے کو لارڈز میں بنگلہ دیش پر فتح حاصل کرلے تو 11پوائنٹس کے ساتھ سیمی فائنل میں جگہ پکی کرلے گا،اگر انگلینڈ نے نیوزی لینڈکو مات دیدی اور پاکستان نے ٹائیگرزکو ہرادیا توگرین شرٹس اور کیویز کے 11،11 پوائنٹس اور فیصلہ نیٹ رن ریٹ پر ہوگا، اس وقت نیوزی لینڈ کا رن ریٹ پاکستان سے بہتر ہے۔

7 پوائنٹس کا حامل بنگلہ دیش بھی سیمی فائنل کی دوڑ سے باہر نہیں لیکن اس کیلیے اسے منگل کو بھارت اور پھر جمعے کو پاکستان کو بھی مات دینے کے ساتھ انگلینڈ کی نیوزی لینڈ سے شکست کی دعاکرنا ہوگی۔

بھارت نے 7 میچز کھیلے اور11 پوائنٹس ہیں، بنگلہ دیش اور سری لنکا سے میچز باقی ہیں، ایک فتح بلو شرٹس کو رن ریٹ کی محتاجی سے آزاد کردے گی۔

شیکھر دھون کے بعد وجے شنکر بھی ورلڈکپ سے باہر

فٹنس مسائل کے باعث بھارتی آل راﺅنڈر وجے شنکر ورلڈ کپ سے باہر ہو گئے۔

وجے شنکر نیٹ پریکٹس کے دوران جسپریت بمرا کی جانب سے کرایا گیا یارکر انگوٹھے پر لگنے سے زخمی ہو گئے تھے جس کے بعد وہ عالمی کپ کے دیگر میچز میں بلیو شرٹس کی نمائندگی نہیں کر سکیں گے، مزید معلوم ہوا ہے کہ وجے شنکر کی جگہ مایانک اگروال کو اسکواڈ میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

اس ضمن میں آئی سی سی سے اجازت بھی طلب کر لی ہے، مایانک اگروال نے گزشتہ سال دسمبر میں آسٹریلیا کیخلاف ٹیسٹ ڈیبیو کیا تھا لیکن ابھی تو وہ ون ڈے انٹرنیشنل میں شروعات نہیں کرسکے ہیں۔

وقار یونس نے بھی بھارتی ٹیم کو کھری کھری سنا دیں

شعیب اختر کے بعد پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وقار یونس نے بھی بھارتی ٹیم کو کھری کھری سنا دیں۔

ورلڈ کپ میں انگلینڈ کے ہاتھوں شکست کے بعد اپنے پیغام میں وقار یونس کا کہنا تھا کہ یہ آپ نہیں ہیں ، جو آپ زندگی میں کرتے ہیں، وہ آپ کو ظاہر کرتا ہے کہ آپ کیا ہیں ، پاکستان سیمی فائنل تک رسائی حاصل کرنے میں کامیاب رہتا ہے یا نہیں میں اس سے پریشان نہیں بلکہ اس سے ہوں کہ کچھ چیمپئنز کی سپورٹس مین شپ کا امتحان ہوا اور وہ اس میں بری طرح ناکام رہے۔

اس سے قبل سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے بھی انگلینڈ کے ہاتھوں بلیو شرٹس کی ہار پر شکوک وشبہات کا اظہار کیا تھا، پوائنٹس ٹیبل کے اعتبار سے 14 پوائنٹس کے ساتھ آسٹریلیا تو پہلے ہی کوالیفائی کر چکا ہے، بھارت اور نیوزی لینڈ 11، 11، پوائنٹس کے ساتھ بالترتیب دوسرے اور تیسرے نمبر پر ہیں جب کہ انگلینڈ 10 پوائنٹس کے ساتھ چوتھے اور پاکستان 9 پوائنٹس کے ہمراہ پانچویں نمبر پر ہے۔

ویرات کوہلی بھی پاکستانی شائقین کے رویے کے مداح نکلے

برمنگھم: بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی بھی پاکستانی شائقین کے رویئے کے مداح ہو گئے۔

ویرات کوہلی کا کہنا ہے کہ مجھے یقین ہے کہ آج پاکستانی کرکٹ شائقین ہمیں سپورٹ کریں گے جو کہ نہایت نایاب چیز ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ انگلینڈ اور بھارت کی ٹیموں کے درمیان ورلڈ کپ کا یہ میچ پاکستانی ٹیم کے لئے بھی اس لئے اہمیت کا حامل ہے کیونکہ بھارتی ٹیم کی فتح کی صورت میں گرین شرٹس کے عالمی کپ کے سیمی فائنل تک رسائی کے امکانات مزید روشن ہو جائیں گ

میچ کی اہمیت کو دیکھتے ہوئے پاکستانی شائقین کی بھی دلی خواہش ہے کہ بھارتی ٹیم ہر حال میں یہ میچ جیتے۔ انگلینڈ اور بھارت کی ٹیموں کے درمیان ورلڈ کپ کے اہم میچ میں ٹاس کے بعد گفتگو کرتے ہوئے ویرات کوہلی کا کہنا تھا کہ مجھے نہیں معلوم کہ باہر کیا ہو رہاہے لیکن مجھے یقین ہے کہ پاکستان کے کرکٹ شائقین میچ کے دوران ہمیں بھر سپورٹ کریں۔

شاہین آفریدی نےعمدہ کارکردگی کا کریڈٹ اظہر محمود کو دیدیا

فاسٹ بولر شاہین آفریدی نے نیوزی لینڈ کے بعد افغانستان کے خلاف بھی عمدہ کارکردگی کا کریڈٹ بولنگ کوچ اظہر محمود کو دے دیا۔

قومی ٹیم کے نوجوان  پیسر کا کہنا ہے کہ نیٹ میں بولنگ کوچ اظہر محمود کے ساتھ بھر پور محنت کی جس کا صلہ مجھے اچھی کارکردگی کی صورت میں ملا، اللہ کا شکر ہے کہ مجھے ایسے وقت میں وکٹیں مل رہی ہیں جب ٹیم کو بھی ان کی ضرورت ہوتی ہے، یہ قومی ٹیم کے ساتھ میرے کیریئر کے لئے بھی بہت اچھا ہے۔

شاہین آفریدی نے کہا کہ میچز کے دوران تمام کھلاڑی ایک دوسرے کو بھر پور سپورٹ کرتے ہیں، میری بولنگ کے دوران بھی ساتھی کھلاڑیوں کی طرف سے بھر پور حوصلہ افزائی کا سلسلہ جاری رہتا ہے، افغانستان کے خلاف 4 کھلاڑیوں کو پویلین کا راستہ دکھانے والے پیسر نے کہا کہ اپنی لائن اینڈ لینتھ کو مزید بہتر بنانا چاہتا ہوں، کوشش ہوگی کہ اگلے میچ میں بھی اپنی عمدہ کارکردگی سے ٹیم کی فتح میں اہم کردار ادا کروں۔

سلوٹ کی نقالی پر شیلڈن کوٹریل اور محمد شامی میں لفظی جنگ

ورلڈکپ میچ میں وکٹ لینے پر سلوٹ جشن منانے کی نقالی کرنے پر ویسٹ انڈین پیسر شیلڈن کوٹریل نے بھارتی بولر محمد شامی کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔

باہمی میچ میں یوزیندرا چاہل نے وکٹ لی تو محمد شامی نے نقالی کرتے ہوئے شیلڈن کوٹریل کے انداز میں جشن منایا، کپتان ویرات کوہلی بھی پیچھے نہ رہے، اس کے رد عمل میں ویسٹ انڈین بولر نے سماجی رابطوں کے ویب سائیٹ کا سہارا لیتے ہوئے کہا ہے کہ اچھی بولنگ اور تفریح تھی لیکن نقل کرنا بھی بڑی چاپلوسی ہوتی ہے۔

دوسری جانب سوشل میڈیا پر محمد شامی کی حرکت کو کئی صارفین فوج کی عزت خراب کرنے والا عمل قرار دے رہے ہیں، پیسر نے اس نقالی کو ایک مذاق قرار دیتے ہوئے تنقید کو ہوا میں اڑا دیا ہے۔

کامران اکمل نے جان بوجھ کر کیچ چھوڑنے کا الزام مسترد کردیا

کامران اکمل نے آسٹریلیا میں جان بوجھ کر کیچ چھوڑنے کا الزام عائد کرنے پر سابق ٹیسٹ کرکٹر عبدالرزاق کی کلاس لے لی۔

اپنے ویڈیو پیغام میں وکٹ کیپر بیٹسمین نے کہا کہ جتنا بھی کھیلا، عزت سے کھیلا، ہمیشہ پاکستان کیلیے اچھی کارکردگی دکھانے کی کوشش کی، ایسا گھٹیا بندہ نہیں کہ ٹیم کو نقصان پہنچاﺅں، ورلڈکپ میں پاکستانی کرکٹرز سے کیچ چھوٹ رہے ہیں تو کیا ان پر الزمات لگادیں، اس طرح کی چھوٹی باتوں پر غصہ تو نہیں آتا، افسوس ضرور ہوتا ہے،جن کیساتھ کھیلا ہوں، وہی منہ اٹھا کر الزام لگادیں، یہ اچھی بات نہیں۔

کامران اکمل نے کہا کہ پاکستان میں اس حوالے سے کوئی قانون ہوتا تو لوگ الزامات لگانے سے پہلے سوچتے، مجھے اچھی طرح معلوم ہے کہ عبدالرزاق کس ذہن کے ساتھ کھیلے اور میں کس ذہن کیساتھ کھیلا،ان کو ایک میچ کے 4 اوورز میں بہت زیادہ رنز پڑے تب ہماری طرف سے تو الزام نہیں لگایا گیا تھا،ان کا میرے بارے میں بیان ناپختہ سوچ کا ثبوت ہے۔

Google Analytics Alternative