- الإعلانات -

کوروناوائرس: امریکہ میں150سے زائد پاکستانی جاں بحق

نجی ٹی وی کے مطابق زیادہ ہلاکتیں نیویارک، کینٹی کٹ اور نیو جرسی میں ہوئی ہیں۔گزشتہ روز بھی 40سالہ پاکستانی رانا اصغر کورونا کے سبب جانی کی بازی ہار گیا۔ وہ نیوجرسی کی مقامی ہسپتال میں زیرعلاج تھا۔

کورونا وائرس کے سبب جاں بحق ہونے والے پاکستانیوں میں باو¿محمد سعید بھی شامل ہے جس کی عمر56 سال اور تعلق پاکستان میں صوبہ پنجاب کے ضلع گوجرانوالہ کے علاقے نوشہرہ ورکاں سے تھا۔

اس سے قبل ایک پاکستانی ملک عنایت بھی کورونا وائرس کے سبب جاں بحق ہوچکے ہیں۔ ملک عنایت کا تعلق بھی نوشہرہ ورکاں سے تھا۔

واشنگٹن میں پاکستانی سفارتخانے کے ترجمان کے مطابق امریکی حکومت نے ابتک جاں بحق ہونے والے پاکستانیوں کے تصدیق شدہ اعداد و شمار نہیں بتائے۔ترجمان کا کہنا ہے کہ کمیونٹی سورسز اور تدفین کے اداروں کے اعداد و شمار اندازوں پر مبنی ہیں۔

سفارتخانے کے مطابق شکاگو، لاس اینجلس اور ہیوسٹن کے قونصل خانوں نے غیر رسمی رپورٹس جاری نہیں کیں۔ صورتحال ہر لمحہ بدل رہی ہے۔ترجمان پاکستانی سفارتخانہ واشنگٹن کے مطابق سفارتخانہ اور امریکہ میں تمام قونصل خانے پاکستانیوں سے رابطہ میں ہیں

خیال رہے کہ امریکہ میں کورونا وائرس کے سب سے زیادہ کیسز ریکارڈ ہوئے ہیں جہاں مجموعی تعداد 6لاکھ13ہزارسے تجاوز کر گئی ہے اور26ہزار47 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔نیویارک میں کورونا وائرس کے سبب سے زیادہ افراد متاثر ہوئے ہیں اور ہسپتالوں میں مریضوں کی تعداد گنجائش سے زیادہ ہوگئی ہے۔

امریکی ریاست میں کم سے کم 37 ہزار وینٹی لیٹرز کی ضرورت ہے اور اپریل کے آخر تک ریاست میں مزید کیسز سامنے آنے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔نیویارک امریکہ میں کورونا کا مرکز سمجھا جا رہا ہے اور صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وہاں مزید 1000 میڈیکل فوجی ورکرز تعینات کر دیئے ہیں۔