- الإعلانات -

کرونا وائرس کے پھیلاؤ نے دنیا بھر کو۔۔۔۔ چینی وزیر خارجہ بھی بول پڑے

چین کےوزیر خارجہ وانگ یی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے خلاف چین اور روس کا ایک دوسرے کے ساتھ تعاون سے نئے دور کا آغاز ہوا ہے اور جامع سٹرٹیجک شراکت داری برائے ہم آ ہنگی بھی بڑھی ہے، روس اس وقت وبائی مرض سے بچاؤ اور اس پر قابو پانے کے حوالے سے خاص طور پر دباؤ میں ہے تاہم چین وبائی مرض کے خلاف روس کو بھر پور تعاون فراہم کرتا رہے گا ،نوول کرونا وائرس کے پھیلا ﺅ نے دنیا بھر کے ملکوں کو ایک بڑے امتحان سے دو چار کردیا ہے جس سےعالمی سیاسی اور معاشی منظرنا مے پردور رس اثرات مرتب ہوں گے۔

چینی میڈیا کے مطابق اپنے روسی ہم منصب  سرگئی لاوروف سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئےچین کےوزیر خارجہ وانگ یی کا کہنا تھا کہ 

چین سے طبی امداد کی پہلی کھیپ ماسکو پہنچ چکی ہے، روس کی جانب سے خریدے گئے حفاظتی سازوسامان کو متواتر بحری جہازوں کے ذریعے بجھوایا جارہا ہے اور طبی ما ہرین کی ٹیم چینی حکومت نے پہلے ہی روس روانہ کردی ہے ۔وانگ نے کہا کہ چین کی حکومت کورونا کے خلاف   جنگ میں روس کو  بھرپور تعاون فراہم کرتی رہے گی اور اسے مکمل اعتماد ہے کہ روس وبائی مرض کے خلاف فتح حاصل کرے گا۔چینی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ نوول کرونا وائرس کے پھیلاؤ نے دنیا بھر کے ملکوں کو ایک بڑے امتحان سے دو چار کردیا ہے جو ایک جامع طریقے سے حکمرانی کے نظام اور صلاحیت کی جا نچ کر رہا ہے اور اس کے عالمی سیاسی اور معاشی منظرنا مے پردور رس اثرات مرتب ہوں گے ۔وانگ نے اس امید کا اظہار کیا کہ چین اور روس ایک جواب نامہ مرتب کریں جو تاریخ کے اس امتحان کا مقابلہ کرسکتا ہے اور عالمی امن اور خوشحالی کے فروغ میں اپنا بھر پور کردار ادا کریں ، چین روس کے ساتھ رابطہ سازی اور ہم آ ہنگی کو مضبوط بنانے کے لئے ہمہ وقت تیار ہے اور جی20 رہنماؤں کے سربراہ اجلاس کے نتائج پر عمل درآمد کے ساتھ ساتھ وبائی مرض کا مقابلہ کرنے کے لئے بین الاقوامی برداری کو یکجہتی اور تعاون کا ایک واضح پیغام دینےپر آمادہ کرےگا ۔

اس موقع پر لاوروف نے وبائی مرض کے خلاف سازوسامان اور میڈیکل ٹیمز روس بھجوانے پر چین کا شکریہ ادا کیا ۔انہوں نے کہا کہ روس اور چین سیاسی طور پر ایک دوسرے کی حمایت کرتے ہیں اور وبائی مرض کے خلا ف ایک دوسرے کی حمایت کرتے ہیں اور وبائی مرض کے خلاف ایک دوسرے کے ساتھ قریبی تعاون کررہے ہیں جو روس چین تعلقات کے منفرد اور سٹریٹجک نوعیت کی مکمل عکاسی کرتے ہیں ۔لاوروف نے کہا کہ روس وبائی مرض کےخلاف جنگ میں چین کی کامیابیوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے اور بنی نوع انسان کے ایک مشترکہ مستقبل کی حامل برادری کی تعمیر کے لئے چین کے وژن کی تائید کرتا ہے جبکہ اس وبائی مرض کو سیاسی رنگ دینے کے انفرادی ملکوں کے اقدامات اور اپنی ذمہ داریاں دوسرے پر ڈ النے کی مخالفت کرتا ہے ۔