- الإعلانات -

گزشتہ روز دُنیا بھر میں سب سے زیادہ گرمی عرفات میں ریکارڈ کی گئی

سعودی عرب کا شمار دُنیا کے گرم ترین خطوں میں ہوتا ہے۔ جبکہ گرمی کے دِنوں میں تو یہاں پر سورج آگ برساتا معلوم ہوتا ہے، جس کی وجہ سے گھروں سے باہر نکلنا اجیرن ہو جاتا ہے۔گزشتہ ماہ مملکت میں اتنی گرمی پڑی ہے کہ لوگوں نے گھروں سے نکلنا کم سے کم کر دیا تھا۔ اگرچہ اس وقت مملکت میں گرمیوں کا موسم ختم ہو رہا ہے، پھر بھی کئی خطے ایسے ہوتے ہیں جہاں اس وقت قیامت کی گرمی پڑ رہی ہے۔

گزشتہ روز دُنیا کے گرم ترین علاقوں میں سعودی عرب کے تین مقامات کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ سعودی ماہر موسمیات اور قصیم یونیورسٹی میں موسمیات کے پروفیسر ڈاکٹر عبداللہ المسند نے بتایا کہ گزشتہ روز دُنیا میں سب سے زیادہ گرمی عرفات اور جدہ میں ریکارڈ کی گئی، جہاں درجہ حرارت 43 سینٹی گریڈ ریکارڈ گیا۔ گرمی کے لحاظ سے گزشتہ روز عرفات سرفہرست تھا، اس کے بعد دوسرے نمبر پر جدہ تھا۔

تیسرے ، چوتھے اور پانچویں نمبر آسٹریلیا کے علاقے ماربل بار، روئے بار ایرو اور پورٹ ہیڈ لینڈ ایئرپورٹ تھے۔ چھٹے نمبر پر سب سے زیادہ گرمی سعودی شہر ینبع میں پڑی جہاں درجہ حرارت 42 سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ ساتویں اور آٹھویں نمبر پر آسٹریلیا کے ہی فزروئے کراسنگ اور کرٹِن آز تھے۔ نویں نمبر پر افریقی ملک نائیجر کا علاقہ بلما رہا۔

جبکہ دسویں نمبر پر آسٹریلیا کا علاقہ ونڈ ہائم ایرو شدید گرمی کی لپیٹ میں پڑی۔ واضح رہے کہ سعودی عرب کے معروف ماہر موسمیات ڈاکٹر زیاد الجہنی نے خوش خبری سُنائی ہے کہ مملکت میں اگلے دس روز تک سردی کی لہر برقرار رہے گی جس کے باعث درجہ حرارت 30 سینٹی گریڈ سے زیادہ نہیں بڑھے گا، جبکہ راتیں بہت ٹھنڈی ہو جائیں گی۔ بیشتر علاقوں میں رات کے وقت درجہ حرارت 14 سینٹی گریڈ تک کم ہو جائے گا۔ یوں سعودی عر ب میں مقیم افراد خوشگوار موسم سے لطف اندوز ہو سکیں گے۔