- الإعلانات -

پیسوں کی خاطر لاش کو ’زندہ‘ رکھنے والی عورت

امریکا میں ایک عورت نے پیسوں کے لیے ایک لاش کو کئی ہفتے تک چھپائے رکھا، کچھ عرصے بعد وہ گھر چھوڑ گئی اور جاتے ہوئے لاش کو ایک ڈبے میں بند کر کے پڑوسی کے ہاں رکھوا گئی۔امریکی ریاست فلوریڈا کی ایک کاؤنٹی کی مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں ایک شخص کی کال موصول ہوئی جس کا کہنا تھا کہ اس کے گھر میں موجود ٹریش کین (کچرے کے ڈبے) میں انسانی باقیات موجود ہیں۔

پولیس موقع پر پہنچی تو اس شخص نے بتایا کہ کچھ عرصے قبل ان کی پڑوسی خاتون اس سیل شدہ ڈبے کو امانتاً رکھوا کر گئی تھیں، خاتون کا کہنا تھا کہ اس میں ان کا ذاتی سامان ہے اور وہ کچھ عرصے بعد واپس آ کر اسے اپنے ساتھ لے جائیں گی۔تاہم 2 ماہ بعد بھی جب وہ خاتون واپس نہیں آئیں تو پڑوسی نے کچرے کو ڈبے کو کھولنے کا فیصلہ کیا، ڈبے کو کھولتے ہی اندر سے شدید بدبو کا بھبھکا آیا، اندر ایک انسانی لاش موجود تھی جو گلنا سڑنا شروع ہوچکی تھی۔

پولیس نے پڑوسی خاتون کی تلاش شروع کردی اور جلد ہی اسے حراست میں لے لیا، ملزمہ نے بتایا کہ مذکورہ شخص (لاش) ان کا پارٹنر تھا جو ایک روز گھر میں مردہ پایا گیا تھا۔خاتون نے پولیس کو اطلاع دینے کے بجائے لاش کو الماری میں چھپا دیا، 3 ہفتے بعد انہوں نے گھر چھوڑنے کا فیصلہ کیا اور جاتے ہوئے لاش کو کچرے کے ڈبے میں سیل کر کے پڑوسی کا ہاں رکھوا گئیں۔

ملزمہ کا کہنا ہے کہ انہوں نے ایسا اپنے پارٹنر کی سوشل سیکیورٹی کی رقم حاصل کرنے کے لیے کیا۔پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے بھجوا دیا جبکہ خاتون کو لاش کی بے حرمتی کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا۔