بین الاقوامی

مقبوضہ کشمیر میں مزید 10 ہزار بھارتی فوجی تعینات

نئی دہلی: مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر میں مزید 10 ہزار فوجیوں کو تعینات کردیا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی آئے دن بڑھتی جارہی ہے، اب تک ہزاروں کشمیری بھارتی فوج کی بربریت کی بھینٹ چڑھ چکے ہیں جب کہ اب مودی سرکار نے مزید 10 ہزار فوجی مقبوضہ کشمیر میں تعینات کردیے ہیں۔

بھارتی حکومت نے مقبوضہ وادی میں اضافی 10 ہزار پیرا ملٹری اہلکاروں کو تعینات کردیا ہے، بھارتی وزارت داخلہ کے مطابق مقبوضہ وادی میں مزید فوج کی تعیناتی قانون کی عملداری قائم کرنے اور سیکیورٹی فورسز کے خلاف کارروائیاں روکنے کے لیے کی گئی ہے۔

دوسری جانب سابق وزیراعلیٰ مقبوضہ کشمیر محبوبہ مفتی کا کہنا ہے کہ مزید فوج تعینات کرنے سے کشمیریوں میں خوف پیدا ہوگا، مقبوضہ کشمیر کا مسئلہ فوج کے ذریعے حل نہیں ہوگا لہذا بھارتی حکومت اپنی پالیسی پر نظرثانی کرے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی مقبوضہ کشمیر کے جنوبی ضلع شوپیاں میں بھارتی فوج نے داخلی و خارجی راستوں کو بند کرکے سرچ آپریشن کیا اور گھر گھر تلاشی لی جس کے دوران جارحیت پسند بھارتی فوج نے فائرنگ کرکے 2 کشمیری نوجوان کو شہید کردیا تھا۔

افغانستان میں پولیس چوکی پر خود کش حملے میں 4 افراد جاں بحق

غزنی: افغانستان میں ضلعی پولیس چوکی پر خود کش حملہ آور نے بارود سے بھری کار ٹکرادی جس کے نتیجے میں 4 افراد ہلاک اور 20 زخمی ہوگئے۔

افغان میڈیا کے مطابق خود کش حملہ غزنی پولیس کے ضلعی دفتر کے پہلے داخلی دروازے پر علی الصبح کیا گیا جس کے نتیجے میں 4 افراد ہلاک اور 20 زخمی ہوگئے۔ زخمیوں اور ہلاک ہونے والوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

غزنی پولیس چیف خالد وردک کا کہنا ہے کہ حملہ آور مرکزی دروازے کو بم دھماکے سے اُڑانے کے بعد عمارت میں داخل ہونا چاہتے تھے لیکن سیکیورٹی فورسز نے ان عزائم کو ناکام بنادیا جس کے باعث کم جانی نقصان ہوا۔

ترجمان طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ غزنی کے ضلعی دفتر کو نشانہ بنایا گیا جس میں سیکیورٹی فورسز کے اہلکار ہلاک ہوئے اور عمارت کو بھی بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔

 

’’دیوار بناؤ صدر ٹرمپ، ہم تمہارے ساتھ ہیں!‘‘ امریکی سپریم کورٹ کا فیصلہ

واشنگٹن: امریکی سپریم کورٹ نے میکسیکو کی سرحد کے ساتھ متنازعہ دیوار بنانے سے متعلق مقدمے میں ٹرمپ انتظامیہ کے حق میں فیصلہ سناتے ہوئے کہا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ، میکسیکو کی سرحد پر دیوار کا ایک حصہ تعمیر کرنے کےلیے امریکی محکمہ دفاع (پنٹاگون) کے بجٹ میں سے 2.5 ارب ڈالر خرچ کرسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ صدارتی انتخابات کے دوران میکسیکو کی سرحد پر دیوار کی تعمیر، ڈونلڈ ٹرمپ کے انتخابی منشور میں شامل تھی جبکہ انہوں نے صدر بنتے ہی اس دیوار کی تعمیر کےلیے کوششیں شروع کردی تھیں۔ البتہ، ٹرمپ کے سیاسی مخالفین اس فیصلے کے خلاف ریاست کیلیفورنیا کی عدالت میں چلے گئے تھے جس نے ٹرمپ کو یہ دیوار تعمیر کرنے سے روک دیا تھا۔

اس فیصلے کے خلاف صدر ٹرمپ نے امریکی سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا جس نے گزشتہ روز انہیں نہ صرف یہ دیوار تعمیر کرنے کی اجازت دے دی ہے بلکہ یہ بھی فیصلہ دیا ہے کہ وہ اس مقصد کےلیے پنٹاگون کے بجٹ میں سے ڈھائی ارب ڈالر استعمال بھی کرسکتے ہیں۔

سپریم کورٹ کے فیصلے پر ٹرمپ نے ٹویٹ کرتے ہوئے اسے ’’بڑی فتح‘‘ قرار دیا:

لیکن ڈونلڈ ٹرمپ کے سیاسی مخالفین، خاص کر ڈیموکریٹس نے اس فیصلے کی شدید مذمت کی ہے۔ امریکی ایوانِ نمائندگان کی اسپیکر اور ڈیموکریٹک پارٹی کی ممتاز رہنما نینسی پلوسی نے ٹرمپ کے طرزِ حکمرانی کو ’’بادشاہت‘‘ کہتے ہوئے اس فیصلے کو ’’انتہائی غلط‘‘ قرار دیا ہے۔

ٹرمپ کی مخالف اور سوشل میڈیا ایکٹیوسٹ سیلی ڈیل نے ٹرمپ کی ٹویٹ کا طنزیہ جواب دیتے ہوئے لکھا:

’’بہت خوب! تو آپ نے ہمارے دفاعی فنڈز ایک ایسی بے کار دیوار کےلیے لوٹ لیے جس کی مخالفت اکثر امریکی کرتے ہیں۔‘‘

اُدھر امریکا میں شہری آزادی کی تنظیم ’’اے سی ایل یو‘‘ اور ماحولیاتی تحفظ کے پریشر گروپس نے بھی اس فیصلے پر کڑی نکتہ چینی کی ہے اور اس کے خلاف ’’نائنتھ سرکٹ کورٹ‘‘ جانے کا اعلان کیا ہے۔

ایوانکا ٹرمپ کی پاکستانی خواتین کو بااختیار بنانے کیلئے تعاون کی پیشکش

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صاحبزادی اور ان کی مشیر ایوانکا ٹرمپ نے پاکستان کو خواتین کو بااختیار بنانے کیلئے تعاون کی پیشکش کی ہے۔

وزیر اعظم عمران خان کے کامیاب دورہ امریکا کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان بین الوزارتی رابطوں میں تیزی آئی ہے۔ واشنگٹن میں وزیر اعظم کے مشیر زلفی بخاری نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صاحبزادی اور مشیر ایوانکا ٹرمپ سے ملاقات کی ہے ۔ جس میں پاکستان اور امریکا کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون شروع کرنے پر اتفاق کیا گیا۔ اس کے علاوہ نوجوانوں کے لئے کاروباری مواقع کے فروغ پربھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات کے دوران ایوانکا ٹرمپ نے خواتین کی فلاح و بہبود کے لئے پاکستان میں منصوبے شروع کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔

زلفی بخاری کا کہنا تھا کہ پاکستانی خواتین کوبا اختیار بنانے میں ایوانکا ٹرمپ کی دلچسپی پر شکرگزارہیں، پاک امریکا تعلقات درست سمت میں بڑھنا شروع ہو گئے ہیں، آئندہ چند ماہ میں پاک امریکا سفارتی محاذ پر مزید کامیابیاں ملیں گی، پاک امریکا مشترکہ تعاون سے انسانی ترقی کےمواقع پیداکریں گے،مرد و خواتین کو آگے بڑھنے کے یکساں مواقع مل سکیں گے۔

قابض بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی میں مزید 2 کشمیری نوجوان شہید

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جارحیت میں مزید 2 کشمیری نوجوان شہید ہو گئے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے جنوبی ضلع شوپیاں میں بھارتی فوج نے داخلی و خارجی راستوں کو بند کرکے سرچ آپریشن کیا اور گھر گھر تلاشی لی جس کے دوران جارحیت پسند بھارتی فوج نے فائرنگ کرکے 2 کشمیری نوجوان کو شہید کردیا۔

علاقہ مکینوں نے نوجوانوں کی شہادت پر شدید احتجاج کرتے ہوئے بھارتی جارحیت کیخلاف شدید نعرے بازی کی اور جدوجہد آزادی کشمیر کے حق میں نعرے لگائے۔ قابض فورس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کی شیلنگ اور ہوائی فائرنگ کی۔

بھارت نواز کٹھ پتلی انتظامیہ نے ضلع بھر میں انٹرنیٹ سروس بند کردی جب کہ تاحال ضلع میں کسی کو بھی داخل ہونے یا باہر جانے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جس کے باعث زخمی مظاہرین کو اسپتال منتقل کرنے میں شدید دشواری کا سامنا ہے۔ حریت رہنماؤں نے بھارتی فوج کی جارحیت کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

امریکی بحریہ کے 16 اہلکار منشیات اور انسانی اسمگلنگ کے الزام میں گرفتار

واشنگٹن: امریکا میں منشیات اور انسانی اسمگلنگ میں ملوث امریکن نیوی کے 16 اہلکاروں کو گرفتار کرلیا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق میکسیکو کی سرحد سے محض 90 کلومیٹر کے فاصلے پر قائم امریکی بحریہ کے فوجی کیمپ پینڈالٹن میں نئی بٹالین کی تشکیل کے دوران 16 اہلکاروں کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

اس بارے میں امریکی فوج کے بیان میں کہا گیا ہے کہ ان 16 اہلکاروں کو منشیات اور انسانی اسمگلنگ میں ملوث گروہ کی جانب سے نشاندہی پر حراست میں لیا گیا ہے جب کہ مزید 8 اہلکاروں سے بھی پوچھ گچھ کی گئی ہے۔

کچھ ماہ قبل امریکی نیوی کے 2 اہلکاروں کو میکسیکو سے تارکین وطن کو امریکا میں داخل کرانے کےلیے 8 ہزار ڈالر رشوت لینے پر گرفتار کیا جا چکا ہے اور انہی دو اہلکاروں سے تفتیش کے دوران حیران کن انکشافات سامنے آئے تھے۔

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے تارکین وطن کو میکسیکو سے امریکا میں داخل ہونے سے روکنے کےلیے سرحد عبور کرنے والوں کو گولی مارنے سے لے کر سرحدی دیوار کی تعمیر جیسے غیر مقبول فیصلے کیے ہیں اور امریکی بحریہ کے اہلکاروں کے خلاف کارروائی بھی اسی تناظر میں ہے۔

فلپائن میں ہلاکت خیز زلزلوں میں 8 افراد ہلاک، 60 زخمی

منیلا: فلپائن میں 5.4 اور 5.9 شدت کے زلزلوں نے بڑے پیمانے پر تباہی مچادی جس کے نتیجے میں 8 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق فلپائن کے شمالی جزیرے بیٹنس کے علاقوں اطبیات میں 5.4 جس کی گہرائی 12 کلومیٹر جب کہ باسکو اور سبتانگ میں 5.9 شدت کے زلزلوں کے جھٹکوں کے باعث بڑے پیمانے پر جانی و مالی نقصان ہوا ہے۔ مقامی حکام نے اب تک 8 افراد کی ہلاکت اور 60 کے زخمی ہونے کی تصدیق کی ہے۔

زلزلے سے متعدد عمارتیں منہدم اور سڑکوں پر دراڑیں پڑ گئیں جب کہ اسپتالوں میں ایمرجنسی میں نافذ کر دی گئی ہے۔ حکام کی جانب سے سونامی کی وارننگ جاری کردی گئی ہے اور زلزلے کے مزید جھٹکے متوقع ہیں۔

ریسکیو ادارے کے ترجمان کا کہنا ہے کہ متاثرہ علاقوں میں عمارتیں منہدم ہونے سے درجنوں افراد ملبے تلے دب گئے تاہم ریسکیو ادارے امدادی کاموں میں مصروف ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ امدادی کاموں کے دوران لاشیں ملنے کا سلسلہ جاری ہے جب کہ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

چین کا مسئلہ کشمیر پر امریکی صدر کی ثالثی کی پیشکش کا خیر مقدم

بیجنگ: چین نے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے پاکستان اور بھارت کے درمیان ثالث بننے کی پیشکش کا خیرمقدم کرتے ہوئے اپنی بھرپور حمایت کا یقین دلایا ہے۔

چین کی وزارت خارجہ کی ترجمان ہوا چونائینگ نے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے صدر ٹرمپ کی ثالثی کی پیشکش کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ عالمی برادری بشمول امریکا مذاکرات کے ذریعے پاک بھارت تعلقات میں بہتری کے لیے مثبت کردار ادا کررہے ہیں۔

ترجمان وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں صدر ٹرمپ کی ثالثی کی پیشکش پر بھرپور حمایت کا یقین دلاتے ہوئے امید ظاہر کی کہ پاکستان اور بھارت مسئلہ کشمیر سمیت دیگر متنازع معاملات کا بات چیت کے ذریعے حل تلاش کر لیں گے جس سے جنوبی ایشیا میں کشیدگی میں کمی اور امن و استحکام کی راہ ہموار ہوگی۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان کے دورہ امریکا کے دوران صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ثالثی کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی تھی اور ان کے بقول ثالثی بننے کی درخواست بھارتی وزیراعظم مودی نے کی تھی۔

Google Analytics Alternative