- الإعلانات -

شوٹر گیمز دماغی چوٹ والے مریضوں کیلئے فائدہ مند

میلبرن: ایک سروے کے مطابق ’ کال آف ڈیوٹی‘ جیسے فرسٹ پرسن شوٹر گیم کھیلنے سے دماغی چوٹ والے مریضوں کو فائدہ پہنچتا ہےاور وہ تیزی سے صحتیاب ہوسکتے ہیں۔

آسٹریلیا کی مک کوارے یونیورسٹی کے ماہرین نے انکشاف کیا ہے کہ فرسٹ پرسن شوٹر گیم کھیلنے سے دماغی چوٹ کے مریضوں میں توجہ بڑھتی ہے اور ان میں معلومات کو پروسیس کرنے کا عمل بھی بہتر ہوتا ہے۔ اس کے لیے انہوں نے 31 مریضوں کو ایک گیم ’میڈل آف آنر‘ رائزنگ سن‘ کھیلنے کو دیا اور ان کی تربیت کی کہ کس طرح گیم میں مختلف حصوں سے گزرنا ہے۔ یہ مشق دماغی چوٹ پر تعلیم اور رہنمائی فراہم کرنے والے ایک پروگرام کے تحت دی گئی ہے۔

کچھ روز گیم کھیلنے کے بعد سر پر چوٹ لگنے والے لوگوں میں توجہ بہتر ہوئی اور وہ روز کے کام اچھی طرح کرنے لگے ۔ اس طرح ثابت ہوا کہ بہت کم خرچ اور تفریحی انداز میں ایسے ہزاروں لاکھوں مریضوں کا علاج کیا جاسکتا ہے جو کسی دماغی چوٹ کے بعد معمول کے کام کرنے میں پریشانی محسوس کرتے ہیں۔  ایکس باس ون، اور پی ایس فور جیسے گیم کونسولز اگرچہ تھوڑے مہنگے ہیں لیکن دماغی مشق کرانے والی میڈیکل مشینوں کے مقابلے میں ان کی قیمت کچھ بھی نہیں۔

تجربے میں 18 سے 65 عمر کے افراد کو شامل کیا گیا لیکن ماہرین کا خیال ہے کہ چھوٹے گروپ پر تجربات کے باوجود یہ طریقہ مفید ہے اور اسے مزید افراد پر آزمانے کی ضرورت ہے ۔ کوگینٹ سائیکالوجی میں شائع ہونے والی اس رپورٹ کے مطابق کسی حادثے میں شکار ہونے والے افراد کو ویڈیو گیمز کی تربیت فراہم کرکے ان کے ذہنی افعال کو بہتر بنایا جاسکتا ہے۔