- الإعلانات -

تربوز کے فوائد جو اسے سپرفوڈ بناتے ہیں

کراچی: تربوز ایک خوشذائقہ، خوش رنگ اور غذائیت سے مالامال ایسا پھل ہے جو برصغیر کی عوام کے لیے کسی تحفے سے کم نہیں۔ اینٹی آکسیڈنٹ اور معدنیات سے مالامال تربوز کے یہی خواص اسے سپرفوڈ بھی بناتے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ تربوز پاک و ہند میں کثرت سے پیدا ہوتے ہیں اور بہت کم قیمت میں عام دستیاب ہے۔

تربوز کا غالب حصہ پانی پر مشتمل ہے۔ 80 سے 90 فیصد پانی کی بنا پر یہ فوری پیاس بجھاتا ہے جس کی ذود ہضم شکریات اسے فوری توانائی کا خزانہ بناتی ہیں۔ گرمیوں میں تھکاوٹ اور نڈھال سے متاثر ہونے والے افراد کے لیے یہ قدرت کا انمول تحفہ بھی ہے۔

تربوز میں گودے کی کمی کے باوجود اس میں کئی طرح کے مفید اجزا موجود ہیں جس کی فہرست بہت طویل ہے۔ تربوز میں فولاد، پوٹاشیئم، سوڈیئم، فاسفورس، کیلشیئم، اور دیگر قیمتی اجزا موجود ہیں۔ یہ معدے میں جاکر پورے نظامِ ہاضمہ کو انتہائی طاقتور اور بہتر بناتا ہے۔ طبی لٹریچر بھی تربوز کی مدح سرائی میں پیش پیش دکھائی دیتا ہے۔ اس کے علاوہ تربوز میں موجود کئی طرح کے وٹامن بھی انتہائی مفید ثابت ہوتے ہیں۔

امریکی ویب سائٹ ہیلتھ لائن نے تربوز کے نو بڑے فوائد بیان کیے ہیں جو فوری حاصل ہوتے ہیں۔ اول یہ پیاس بجھاتا ہے اور بدن میں پانی کی مقدار کو برقرار رکھتا ہے، دوم اس کے گودے میں کئی مرکبات اور معدنیات پائی جاتی ہیں، سوم، کئی تحقیق سے ثابت ہے کہ یہ کینسرکی راہ میں رکاوٹ ہے، سب سے بڑھ کر دل کے لیے بہت مفید ہے۔ اس میں موجود بعض اجزا جلد کو خوبصورت بناتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ بعض حسن آور کریموں اور فیس پراڈکٹ میں تربوز کے اجزا شامل کیے جاتے ہیں۔

دل اور بلڈ پریشر میں مفید

امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن نے اسے دل اور بلڈ پریشر کے لیے انتہائی مفید قرار دیا ہے۔ ویب ایم ڈی نامی ویب سائٹ کے مطابق تربوز میں موجود لائسوپین اور دیگر اقسام اینٹی آکسیڈنٹس کی بدولت یہ ذیابیطس کا خطرہ بھی ٹالتا ہے۔ یہی لائسوپین سخت دھوپ میں جلد کو جھلسنے سے بھی بچاتا ہے۔

اس میں موجود ایک جزو سٹرولائن دل اور بلڈ پریشر کو تندرست حالت میں رکھتا ہے۔ بعض چھوٹے مطالعات سے معلوم ہوا ہے کہ تربوز کا باقاعدہ استعمال دل کے دورے کے خطرات کم کرتا ہے۔

جوڑوں کی حفاظت

تربوز کے بے تحاشہ قدرتی رنگوں میں ایک بی ٹا کرپٹوزینتھین بھی ہے۔ یہ جوڑوں کے درد اور ان کی اندرونی سوزش کم کرتا ہے۔ اس لیے تربوز کا باقاعدہ استعمال جوڑوں کے درد سے بھی محفوظ رکھنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

تربوز اور بصارت

تربوز میں وٹامن اے کی اچھی مقدار موجود ہوتی ہے جو آنکھوں اور بصارت کے لیے بہت ضروری وٹامن ہے۔ اگر روزانہ تربوز کی صرف ایک قاش بھی کھائی جائے تو اس سے روزمرہ وٹامن اے کی 10 فیصد تک مقدار حاصل ہوتی ہے۔ اس لیے بالخصوص بچوں کو تربوز ضرور کھلائیں۔

ورزش میں مددگار

تربوز اینٹی آکسیڈنٹس اور کئی طرح کے امائنو ایسڈ سے بھرپور ہے جو ورزش کرنے یا کام کی قوت بھی فراہم کرتا ہے۔ یوں نوجوانوں کے لیے تربوز سے بڑھ کرکوئی بہترین مقوی غذا نہیں۔