صحت

قبض سے فوری نجات کا آسان نسخہ

اسلام آباد: قبض کی بیماری سے ہر انسان عمر کے کسی نہ کسی حصے میں ضرور مبتلا ہوتا ہے لیکن عام طورپر اس کے متعلق لب کشائی کو باعث شرمندگی سمجھا جاتاہے۔ایسے میں جب آپ کبھی قبض کی شدید تکلیف دہ بیماری میں مبتلا ہوجائیں تو اس سے فوری آرام کیلئے کچن کی طرف دوڑ لگا ئیں۔ کچن میں جا کر آپ نے سب سے پہلے پانی ابال کر اس میں لیمن کا جوس اورکٹی ادرک شامل کرلیں۔تشفی بخش نتائج کیلئے اسے دن میں دو سے تین بار استعمال کریں۔(ادرک کو باریس پیس کر گنے کے جوس یا شہد کیساتھ بھی استعمال کرسکتے ہیں )۔تلی ہوئی سبزیوں کو ہلکا سا مصالحے دار بنانے کیلئے ان میں باریک کٹی ہوئی تازک ادرک کا استعمال کریں۔قبض سے نجات اور نظام انہضام کو بہتر بنانے کیلئے ادرک کا تازہ ٹکڑا لیں ،اس کو کاٹ کر آہستہ آہستہ چبائیں۔ادرک کی چائے آپ کو قبض کی شکایت نہیں ہونے دے گی کیونکہ ادرک میں جنجرول کی موجودگی کی کے اس میں اینٹی آکسیڈنٹس ،ورم ،سوزش کیخلاف مدافعت اور رسولی کو بڑھنے سے روکنے کی خصوصیات پائی جاتی ہیں۔علاوہ ازیں ادرک میں نزلہ زکام ، بخار ، جوڑوں گھٹنوں کے درد ،عارضہ قلب اور کینسر کے خلاف بھی قوت مدافعت پائی جاتی ہے

ذہنی تناﺅاور پریشانی کو کم کرنے کا آسان حل

اسلام آباد: ذہنی تناﺅاور پریشانی کو کم کرنے کے لئے مختلف سکون آور ادویات کا استعمال کیا جاتا ہے لیکن ماہرین نے اب اس کا نہایت آسان ترین حل پیش کر دیا ہے۔امریکا میں ہونے والی ایک تحقیق میں ماہرین کا کہنا ہے کہ رنگ ہمارے مزاج پر بہت زیادہ اثرانداز ہوتے ہیں صرف ایک خاص رنگ کو دیکھ کر ذہن پر موجود تناﺅکو کم کیا جاسکتا ہے، اس حوالے سے نیلا رنگ سب سے زیادہ خاص ہے جو امن اور سکون کا احساس فوری طور پر ذہن کو دلاتا ہے۔تحقیق کے مطابق نیلے رنگ کو دیکھنے سے تناﺅ پر قابو پانے میں مدد ملتی ہے اور آپ فکر مند ہو تو نیلے رنگ کے منظر یا آسمان کو ہی دیکھنا شروع کردیں تو پریشانی اور فکر دونوں غائب ہوجائیں گی۔

دل کے مریضوں کیلئے بڑی خوشخبری

جلد بوڑھا کردینے والی روزمرہ کی عادات

اسلام آباد: کیا آپ اپنی موجودہ عمر کے مقابلے میں زیادہ بڑی عمر کے نظر آتے ہیں؟اگر آپ آئینے میں ایسا منظر دیکھنا نہیں چاہتے تو اپنی روزمرہ کی عادات میں تبدیلی لانا ہی سب سے بہترین طریقہ کار ثابت ہوگا، خوراک اور نیند وغیرہ بھی آپ کے چہرے کو بوڑھا جبکہ زندگی کی مدت کو کم کردیتے ہیں۔ایسی چند عادات کے بارے میں جانیے جو آپ کو جلد بوڑھا کرسکتی ہیں

ملٹی ٹاسک

ایک وقت میں بہت سارے کام یا ملٹی ٹاسک اگر آپ ہر وقت متعدد کام بیک وقت کرنے کے عادی ہیں تو اس مصروف زندگی کے تنا کی قیمت آپ کے جسم کو ادا کرنا پڑے گی۔متعدد سائنسی تحقیقی رپورٹس میں یہ بات سامنے آچکے ہے کہ بہت زیادہ تنا جسمانی خلیات کو نقصان پہنچانے اور عمر کی رفتار بڑھانے کا سبب بنتا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ایک وقت میں ایک کام کرے اور اسے مکمل کرنے کے بعد ہی کسی اور چیز پر توجہ دیں۔
مٹھاس کا بہت زیادہ استعمال
میٹھی اشیاکس کو پسند نہیں ہوتی مگر یہ جسمانی وزن میں اضافے کے ساتھ ساتھ آپ کے چہرے کی عمر بھی بڑھا دیتی ہیں۔ شوگر یا چینی زیادہ استعمال کی وجہ سے ہمارے خلیات سے منسلک ہوجاتی ہے اور اس کے نتیجے میں چہرے سے سرخی غائب ہوجاتی ہے اور آنکھوں کے نیچے گہرے حلقے ابھر آتے ہیںاسی طرح جھریاں اور ہلکی لکیریں بھی چہرے کو بوڑھا بنا دیتی ہیں۔ تو میٹھی اشیاسے کچھ گریز آپ کے چہرے کی چمک برقرار رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔
کم نیند
کم سونا نہ صرف آنکھوں کے گرد بدنما حلقوں کا سبب بنتا ہے بلکہ یہ زندگی کی مدت بھی کم کردیتا ہے۔ روزانہ سات گھنٹے سے کم نیند لینے کی عادت دن بھر کم توانائی، ذہنی سستی، توجہ مرکوز رکھنے میں مشکلات یا موٹاپے وغیرہ کا سبب بن جاتی ہے۔
بہت زیادہ ٹی وی دیکھنا
آج کل لوگوں کا کافی وقت ٹی وی پروگرامز دیکھتے ہوئے گزرتا ہے مگر برٹش جرنل آف اسپورٹس میڈیسین کی ایک تحقیق کے مطابق ایک گھنٹے تک لگاتار ٹی وی دیکھنا بائیس منٹ کی زندگی کم کردیتا ہے۔ اسی طرح جو افراد روزانہ اوسطا چھ گھنٹے ٹی دیکھتے ہیں وہ اس عادت سے دور رہنے والے افراد کے مقابلے میں پانچ سال کم زندہ رہ پاتے ہیں۔اس کی وجہ ہے کہ ٹی وی دیکھنے کیلئے آپ زیادہ تر بیٹھے رہتے ہیں، جس کے باعث جسم شوگر کو ہمارے خلیات میں جمع کرنا شروع کردیتا ہے جس سے موٹاپے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔اس سے بچنے کا ایک طریقہ تو یہ ہے کہ اگر آپ ٹی وی دیکھ رہے ہو تو ہر تیس منٹ بعد کچھ دیر کیلئے اٹھ کر چہل قدمی بھی کریں۔
زیادہ وقت بیٹھ کر گزارنا
دن کا زیادہ وقت بیٹھ کر گزارنے یا سست طرز زندگی کے عادی افراد میں موٹاپا کا خطرہ تو ہوتا ہی ہے اس کے ساتھ ساتھ گردوں اور دل کے امراض کیساتھ ساتھ کینسر کا امکان بھی بڑھ جاتا ہے۔ اگر خود کو صحت مند رکھنا ہو تو روزانہ ورزش کی عادت کو پانان سب سے زیادہ فائدہ مند ہوگا۔
بہت زیادہ میک اپ کا استعمال
چہرے پر بہت زیادہ میک اپ کا استعمال بڑھاپے کی جانب آپ کا سفر بھی تیز کردے گا۔ بہت زیادہ میک اپ خاص طور پر تیل والی مصنوعات جلد میں موجود ننھے سوراخوں یا مساموں کو بند کرکے مسائل کا سبب بن جاتی ہیں۔اسی طرح جلدی مصنوعات کا الکحل اور کیمیکل سے بنی خوشبو کے ساتھ استعمال سے جلد سے قدرتی نمی ختم ہوجاتی ہے اور وہ خشک ہوجاتی ہے جس سے قبل از وقت جھریاں ابھر آتی ہیں۔
نیند کے دوران چہرہ تکیے پر رکھنا
پیٹ کے بل یا ایک سائیڈ پر لیٹ کر سونے سے آپ کا چہرہ تکیے میں دب کر رہ جاتا ہے اور جھریاں ابھرنے کیساتھ بڑھاپے کا سبب بنتا ہے۔ایک تحقیق کے مطابق چہرہ مسلسل تکیے میں دبا رہے تو وہ اندر سے کمزور ہوجاتا ہے اور موجودہ عمر کے مطابق نظر نہیں آتا۔ اگر ایسا مسلسل کیا جائے تو جلد ہموار نہیں رہتی۔
اسٹرا کے ذریعے مشروب پینا
کسی مشروب کو اسٹرا کے ذریعے پی کر آپ دانتوں کو تو داغ لگنے سے بچاسکتے ہیں مگر ہونٹ سکڑنے کا یہ عمل آنکھوں اور چہرے کے ارگرد جھریاں پڑنے کا سبب ضرور بن جاتا ہے۔ایسا اس وقت بھی ہوتا ہے جب سیگریٹ نوشی کی جائے۔اپنی خوراک سے چربی کا استعمال مکمل ختم کردینا۔ خوراک میں کچھ حد تک چربی کا استعمال شخصیت میں جوانی کے اظہار اور احساس کیلئے ضروری ہوتا ہے۔اومیگا تھری فیٹی ایسڈ سے بھرپور مچھلی اور کچھ نٹس جیسے اخروٹ وغیرہ جلد کو نرم و ملائم اور جھریوں سے بچاتے ہیں، جبکہ دل اور دماغ کی صحت کو بھی بہتر بناتے ہیں۔
جھک کے بیٹھنا
اپنے کمپیوٹر یا لیپ ٹاپ کے کی بورڈ کے سامنے گھنٹوں کمر جھکا کر بیٹھے رہنے سے آپ کی ریڑھ کی ہڈی بدنما کبڑے پن کی شکل میں ڈحل جاتی ہے۔قدرتی طور پر یہ ہڈی متوازن ایس شکل کے جھکا کی حامل ہوتی ہے تاکہ ہم چلنے پھرنے میں مشکل نہ ہو۔مگر گھنٹوں تک جھکے رہنے سے قدرتی شکل تبدیل ہوجاتی ہے، جس سے پٹھے اور ہڈیاں غیرمعمولی دبا کا شکار ہوکر قبل از وقت بوڑھوں کی طرح چلنے پھرنے پر مجبور کردیتی ہیں۔

چاکلیٹ کا استعمال دماغ کی صلاحیتوں میں اضافہ

آسٹریلیا: نئی تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ ہفتے میں ایک بار چاکلیٹ کا استعمال دماغ کی صلاحیتوں میں اضافے کے ساتھ یادداشت کو تیز کرتا ہے۔آسٹریلیا میں ہونے والی تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ چاکلیٹ کا استعمال دماغی صلاحیتوں کو نکھارنے میں مدد فراہم کرتاہے۔ تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ اگر ہفتے میں صرف ایک بار چاکلیٹ کا استعمال کیا جائے تو اس سے نہ صرف دماغی صلاحتیوں پر مثبت اثر پڑتا ہے بلکہ یادداشت بھی تیز ہوتی ہے۔ تحقیق میں کہا گیا ہے کہ چاکلیٹ میں شامل ’’فلیوانول‘‘ نامی کمپاؤنڈ ہوتا ہے جس کی وجہ سے دماغ کے کچھ سیلز جلدی متاثر نہیں ہوتے اور دماغی صلاحیتوں پر مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

چینی کھانے کے بڑے نقصانات

لندن: ہم چینی کا استعمال بکثرت مشروبات اور کھانوں میں کرتے ہیں لیکن اگر اسے چھوڑ دیا جائے تو جسم میں حیرت انگیز تبدیلیاں ہوتی ہیں۔
جلد کی خرابی
میٹھی اشیاءجیسے چاکلیٹ،میٹھائیاں،سافٹ ڈرنکس وغیرہ کے استعمال سے جسم میں چینی کا لیول بڑھتارہتا ہے جس کا اثر براہ راست ہماری جلد پر ہوتا ہے اور وہ خراب ہونے لگتی ہے۔اگر جلد پر کوئی دانا یا پھنسی نکلی ہوتو چینی کھانے سے اس کے خراب ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں اور اس کے ساتھ ہی چینی کھانے کی وجہ سے جسم پر دانے بھی زیادہ نکلتے ہیں۔
بڑھاپے میں جلدی
جیسا کہ بتایا گیا ہے کہ چینی جلد کے لئے نقصان دہ ہے لہذا یہ بھی ہوتا ہے کہ جلد ڈھلکنے لگتی ہے اور بڑھاپے کے آثار جلد ظاہر ہوجاتے ہیں۔نیدر لینڈ کی لیڈن یونیورسٹی کی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ جن لوگوں کے خون میں چینی کی زیادہ مقدار تھی وہ ان لوگوں کی نسبت زیادہ بوڑھے لگ رہے تھے جن کے خون میں چینی کی کم مقدار تھی۔
بے خوابی
چینی کے زیادہ استعمال سے آپ کی نیند کم ہونے لگتی ہے اور آپ بے خوابی کا شکار رہتے ہیں۔2016ءمیں کی گئی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ چینی کی زیادہ مقدار کی وجہ سے نیند میں خلل پیدا ہونا ایک معمول بن جاتا ہے۔
دل کی بیماریاں
جس طرح نمک بلڈ پریشر کے لئے نقصان دہ ہے بالکل اسی طرح چینی بھی اپنے ساتھ بہت سے نقصانات لاتی ہے۔جو لوگ چینی کی وجہ سے 25فیصد زیادہ حرارے لیتے ہیں ان میں دل کی بیماریوں میں مبتلا ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔
یاداشت میں کمی
ایک تحقیق میں سائنسدانوں نے چوہوں کو فروکٹوس والی غذا دی جس کی وجہ سے ان کی یاداشت پر اثر دیکھا گیا۔ماہرین کا کہنا ہے کہ زیادہ چینی کھانے سے یاداشت کمزور ہوجاتی ہے۔

ٹانگوں کے پٹھے اور دماغ کا تعلق ۔۔۔حیران کن انکشاف

لندن: ہمارے جسم میں ایک حصہ ایسا بھی ہے جس کی صحت کو دیکھتے ہوئے ہم اپنے دماغ کی صحت کے بارے میں بتاسکتے ہیں اور یہ حصہ ہماری ٹانگیں ہیں۔کنگزکالج لندن کے تحقیق کاروں کاکہنا ہے کہ جتنے ہماری ٹانگوں کے پٹھے مضبوط ہوتے ہیں اتنا ہی ہمارا دماغ بہتر طریقے سے کام کرتا ہے۔Gerontologyمیں شائع ہونے والی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ ہم ورزش اور واک سے اپنی ٹانگوں کو مضبوط بناتے ہیں اور ساتھ ہی ٹانگوں کی مضبوطی سے ہمارے دماغ پر اس کے انتہائی مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ماہرین نے 1999ءسے دس سال کے لئے 324صحت مند جڑواں خواتین کامطالعہ کیا اور تحقیق کے آغاز اور اختتام پر ان خواتین کی سوچ،علم اور یاداشت کو دیکھا گیااور یہ بات سامنے آئی کہ جن کی ٹانگیں مضبوط تھیں ان کا دماغ کافی تیز ی سے کام کررہاتھا۔تحقیق کار ڈاکٹر کلیر سٹیوز کا کہنا تھا کہ ہر انسان کی خواہش ہوتی ہے کہ وقت گزرنے کے ساتھ اس کا دماغ بہتر طریقے سے کام کرے اور تحقیق میں یہ بات ثابت ہوئی کہ جن لوگوں نے اپنی ٹانگوں کو مضبوط رکھا،ان کی دماغی صحت ان لوگوں کی نسبت زیادہ تھی جنہوں نے اپنی ٹانگوں کے پٹھوں پر خاص توجہ نہ دی۔

لہسن کے خالی پیٹ استعمال کے فوائد

لندن:لہسن ایک ایسی سبزی ہے جس کا استعمال قدیم زمانے میں رہنے والے لوگ بھی کیا کرتے تھے اور اس کی افادیت سے کبھی انکار نہیں کیا گیا۔مصری، رومن، ایرانی، یہود، عرب اور دنیا کی تمام اقوام نے لہسن کے فوائد پر کافی کچھ لکھا ہے اور اسے کبھی بھی خطرناک یا  نقصان دہ نہیں کہا گیا۔ان تمام فوائد کی سجہ سے اسے ’مصالحہ جات کا سردار‘ بھی کہا گیا ہے۔
آج ہم آپ کو لہسن کے خالی پیٹ استعمال کے فوائد بتائیں گے۔
1.صبح اٹھتے ہی خالی پیٹ کھانے سے جسم کا مدافعتی نظام مضبوط ہو تا ہے اور انسانی جسم میں کئی خطرناک بیماریوں کے خلاف لڑنے کی صلاحیت بہتر ہوتی ہے۔
2.خالی پیٹ لہسن کھانے سے پیٹ میں موجود بیکٹیریا پیٹ خالی ہونے کہ وجہ سے بہت کمزور ہو جاتا ہے اور یہ لہسن کی طاقت کے خلاف لڑ نہیں پاتاجس سے آپ صحت مند اور کئی بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں گے۔
3.لہسن ایک قدرتی انٹی بائیوٹک ہے اور سردیوں میں اس کے استعمال سے انسان کھانسی، نزلہ ،سردی اور زکام سے محفوظ رہتا ہے۔
4.یہ خون کو پتلا کرتا ہے جس سے آپ کا نظام دوران خون تیز رہتا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ آپ کو بلند فشار خون سے بھی نجات ملتی ہے۔
5.اگر خون کی شریانیں بند ہونے لگیں تو روزانہ خالی پیٹ لہسن کا استعمال کریں ، بہت جلد آپ کو محسوس ہوگا کہ آپ کی طبیعت بحال ہو رہی ہے۔
6.اگر اعصابی کمزوری کا مسئلہ ہو تب بھی لہسن انتہائی مفید ثابت ہوتا ہے۔
7.اگر آپ کو جلدی بیماری کا مسئلہ درپیش ہو تو کھانے میں لہسن کی مقدار بڑھادیں۔ اس سے آپ کے جسم میں زہریلے مادے کم ہوں گے اور جلد تر وتازہ رہے گی۔

Google Analytics Alternative