صحت

ملتان : نشر اسپتال میں مریض کی موت پرورثا کا احتجاج

ملتان نشتر اسپتال کے برن یونٹ میں مبینہ طور پر ڈاکٹرز کی غفلت کے باعث جاں بحق ہونے والے شخص کےلواحقین نے ڈاکٹرز کے خلاف مظاہرہ کیا۔

خوشحال کا رہائشی 35 سالہ ارشاد گزشتہ روز سلنڈر پھٹنے سے جھلس گیا تھا،جس کو نشتر اسپتال کے برن یونٹ میں لایا گیا، جہاں پر وہ زیر علاج تھا ،آج اس کے دم توڑنے پر اس کے ورثا نے ڈاکٹرز پر الزام عائد کیا ہے کہ مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سے ارشاد دم توڑ گیا ہے،اس پر ورثانے برن یونٹ کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا ۔

ٕمظاہرین کو روکنے کے لیے سیکورٹی گارڈ نے مداخلت کی تو ورثا اور سیکورٹی گارڈ کے درمیان ہاتھا پائی ہوئی اور ایک دوسرے کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔ بعد ازاں اسپتال انتظامیہ کی مداخت پر ورثا مقتول کی لاش لے کر گھر روانہ ہو گئے۔

چینی کسان نے گردے کی پتھری سے نجات دلانے والا بستر ایجاد کرلیا

ژیجیانگ: چین میں ایک کسان نے اپنی بیوی کو گردے کے درد میں تڑپتا دیکھ کر اس کے لیے خود ایک بستر ایجاد کیا جس پر آرام کرنے کے بعد اس کی بیوی کے گردے میں پتھریاں ختم ہوگئیں۔

چین کے صوبے جیانگژی کے رہائشی کسان کی بیوی کا ایک گردہ ناکارہ ہونے کے بعد 1993 میں اسے نکال دیا گیا تھا جس کے بعد سے وہ اپنی بیوی کی مدد کے بارے میں سوچتا رہا جب کہ دوسرے گردے میں بھی پتھریاں بننے لگیں تھے اور ڈاکٹروں کے مطابق ایک گردے والے مریض کی پتھریاں خارج کرنے والا آپریشن بہت خطرناک اور جان لیوا بھی ثابت ہوسکتا ہے۔ ڈاکٹروں کے مطابق کسان کی بیوی کو مشورہ دیا گیا کہ وہ دن میں کچھ وقت اس طرح الٹی ہوکے ان کا سر نیچے کی جانب ہو تو اس روایتی طریقے سے پتھریاں خارج ہوسکتی ہیں۔

معالج کے مشورے کے بعد کسان ایک ایسے نظام پر غور کرنے لگا جس پر لیٹ کر یہ عمل انجام دیا جاسکے اور اس کے ذہن میں ایک بستر کا خاکہ ابھرا۔ کسان نے ایک ماہ تک اپنی ایجاد کے نقشے تیار کیے اور اپنی گھریلو اشیا سے بستر تیار کرلیا۔ یہ بستر 360 درجے ( یعنی مکمل) دائرے میں گھوم سکتا ہے اور ہر زاویے سے اوپر اور نیچے رک سکتا ہے۔ اس کے بعد جسم میں ٹریکٹر کے پہیے سے تھرتھراہٹ پیدا جاتی ہے تاکہ پتھر گردے سےباہر خارج ہوجائیں۔ کسان کی بیوی کو صرف 5 روز کے دوران 10 منٹ تک الٹا رکھا گیا اور اس کے بعد ان کے گردے کی ساری پتھریاں نکل آئیں اور بدن سے خارج ہوگئیں۔

کسان کی بیوی کی صحتیابی کی خبریں سوشل میڈیا پر پھیلنے لگیں جس کے بعد پتھری ختم کرنے والے بستر کی مانگ میں اضافہ ہوتا چلاگیا۔ لیکن چینی قوانین کے مطابق گردوں میں پتھری کے مریض ان کا بستر مفت میں استعمال کرسکتے ہیں اور ان میں سے کم ازکم تین افراد نے اعتراف کیا ہے کہ یہ بستر ان کے لیے مفید ثابت ہوا ہے۔

اب کسان نے اپنی اس اہم ایجاد کا پیٹنٹ حاصل کرلیا ہے اور وہ اسے بڑے پیمانے پر تیار کرکے درد سے تڑپتے ہوئے مریضوں کو گردے کی پتھری سے نجات دلوانا چاہتا ہے۔

سندھ میں پولیو کا نیا کیس سامنے آگیا

ضلعی پولیو آفیسر ڈاکٹر سنیل خواجہ کے مطابق یونین کونسل راہوکی کے گائوں حاجی چنیسر جت میں ایک سال کی بچی عالم میں پولیو وائرس کی تصدیق ہو گئی ہے ۔

ڈاکٹروں کےمطابق کچھ عرصہ قبل پولیو کے شبہ میں بچی کی رپورٹس اسلام آباد بھیجی گئی تھیں، جس میں اب پولیو کی تصدیق ہوگئی ہے۔

پولیو کی تصدیق کے باوجود متاثرہ دیہات میں محکمہ صحت کی ٹیمیں اب تک نہیں پہنچیں۔

کراچی: ایک ہفتے میں مزید 62 افراد ڈینگی کا شکار

کراچی میں ایک ہفتے کے دوران مزید 62 افراد ڈینگی میں مبتلا ہوگئے،سربراہ انسداد ڈینگی سیل ڈاکٹر مسعود سولنگی کے مطابق شہر میں رواں سال متاثرہ افراد کی تعداد 1773 تک جا پہنچی ہے ۔

ڈاکٹر مسعود سولنگی کے مطابق شہر میں ایک ہفتے کے دوران 5 درجن سے زائد افراد ڈینگی میں مبتلا ہو چکے ہیں اورشہر میں رواں سال متاثرہ افراد کی تعداد ڈیڑھ ہزار سے زائدہوگئی ہے۔

سربراہ انسداد ڈینگی سیل ڈاکٹر مسعود سولنگی نے کہا کہ صوبے بھر میں ڈینگی سے متاثرہ افراد کی تعداد 2175ہوگئی ہے۔ان کے مطابق رواں سال ڈینگی سے 3 ہلاکتیں سامنے آچکی ہیں-

جیکب آباد:خسرے سے 9بچے متاثر، ایک جاں بحق

ڈیوٹی میں غفلت برتنے پر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر جیکب آبادڈاکٹر سانون شیخ نے مذکورہ یوسی کے ویکسینیٹر زین سرکی اور ٹی ایف سی عبدالشکور دستی کا ڈی جی آفس حیدرآباد تبادلہ کردیا ہے ۔

اس سلسلے میں ڈی ایچ او ڈاکٹر سانون شیخ نے خسرہ کی وبا پھیلنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ وبا کے بعد مذکورہ علاقے اور گردونواح میں معصوم بچوں کو ویکسین دی جا رہی ہے ۔

سرد موسم میں ذرا سی احتیاط کئی بیماریوں سے بچا سکتی ہے

کراچی میں سرد موسم کی آمد کے ساتھ ہی الرجی اور دمہ سمیت مختلف بیماریاں عام ہوجاتیں ہیں ،ماہرین کے مطابق ذرا سی احتیاط کئی بیماریوں سے بچا سکتی ہے۔

موسم ہوا تبدیل ،گرم ہواؤں کی جگہ ٹھنڈی اور خنکی والی ہواؤں نے ڈالے دیڑے ، سرد موسم کیا آیا بیماریاں بھی ساتھ لایا ۔

ماہرین طب کے مطابق سرد موسم اپنے ساتھ وائرل انفیکشن سمیت کھانسی ،نزلہ ،زکام اور الرجی میں اضافہ کردیتا ہے۔

اب فالج کے مریض اپنے پیروں پر کھڑے ہوسکیں گے

فالج کے مریضوں کے لئے خوش خبری ،اب وہ بھی اپنے پیروں پر کھڑے ہوں گے۔ سائنسدانوں کی تیار کردہ نئی ڈیوائس سےفالج کے مریض اپنی مشکل پر قابوپاسکیں گے۔

جینوا سے جاری ہونے والی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ڈیوائس کو 2 بندروں میں استعمال کیا گیا،جنہوں نے اسے اپنے فالج زدہ پیروں کے لئے کامیابی سے استعمال کیا۔

دماغ سے کنٹرول ہونے والی یہ ڈیوائس ایک بین الاقوامی ٹیم نے تیار کی ہے اور امید ہے کہ انسانوں کے استعمال کے لئے جلد ہی اس کا تجربہ کیا جائے گا۔

عالمی ٹیم کے ایک رکن کا کہناہے کہ پہلی مرتبہ ہم اس بات کا تصور کر سکتے ہیں کہ مکمل طور پر فالج زدہ انسان دماغ سے چلنے والی اس ڈیوائس کے ذریعے اپنی ٹانگیں استعمال کر سکے گا۔

یہ ڈیوائس دماغ سے ملنے والےسگنل کو ڈی کوڈ کرکے پیر چلانے میں مدد کرے گی۔

یہ ڈیوائس سوئٹزر لینڈ میں تیار کی گئی ہے اور اس کے اہم اجزا کی تیاری میں امریکی یونیورسٹی اور جرمنی کی ایک کمپنی نے حصہ لیا ہے۔

کئی شہروں میں خشک سردی ، شہری مختلف بیماریوں کا شکار

ادھروادی کوئٹہ اور بلوچستان کےمختلف شہروں میں سردی کی لہر نے موسم کو مزید سرد کر دیا ہے، تاہم خشک موسم کے باعث موسمی بیماریوں نے سر اٹھانا شروع کر دیا ہے ۔

کو ئٹہ میں کم سےکم درجہ حرارت ایک ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ قلات میں کم سےکم درجہ حرارت منفی 3 ڈگری سینٹی گر یڈ ،دالبندین میں5ڈگری سینٹی گریڈ، خضدار میں 10اورژوب میں 11ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ۔

محکمہ مو سمیا ت کے مطابق آئندہ 24گھنٹوں کےدوران صوبےکے بیشتر علاقوں میں موسم خشک اورسرد رہنےکاامکان ہے۔ملتان میں بھی موسم کی تبدیلی نے شہریوں پر خوشگوار اثرات مرتب کئے ہیں، تاہم خشک سردی کے باعث لوگ موسمی بیماریوں میں بھی مبتلا ہو رہے ہیں ۔

ملتان میں آج صبح کے وقت درجہ حرارت 14 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جبکہ دن میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 30 ڈگری سینٹی گریڈ رہے گا ۔ محکمہ موسمیات کے مطابق موسم میں اب آہستہ آہستہ تبدیلی متوقع ہے اور سردیوں کا آغاز ہو رہا ہے، جس کے ساتھ دھند کا سلسلہ بھی جاری ہے ۔

آج ملتان میں میں دھند کی حد نگاہ 5 سو میٹر رہی، جس سے شہریوں کو آمدورفت میں پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑا، تاہم شہر میں اسموگ کا سلسلہ ختم ہو گیا ہے ۔ دوسری جانب خشک موسم سے شہریوں میں نزلہ ، زکام اور کھانسی جیسی شکایات بڑھ رہی ہیں تاہم پہلی بارش کے بعد ہی موسمی بیماریوں میں کمی آ جائے گی ۔

Google Analytics Alternative