- الإعلانات -

سعودی عرب ایک بار پھرمصیبت زدہ پاکستانی بھائیوں کی مدد کو آ گیا

سعودی عرب پاکستان کا سچا اور دیرینہ دوست ہے۔ جس نے ہر مشکل گھڑی میں پاکستان اور پاکستانی عوام کی مدد کی ہے۔ چاہے وہ جنگ کا موقع ہو یا کوئی قحط، آفت یا دہشت گردی کی جنگ۔ سعودی حکومت کی جانب سے ہر موقع پر پاکستان کو اخلاقی، سفارتی اور مالی امداد مہیا کی گئی ہے۔ اسی وجہ سے پاکستان اور سعودی عرب کی دوستی لازوال ہے۔
سعودی حکومت نے ایک بار پھر بڑے بھائی کا کردار ادا کرتے ہوئے سندھ کے سیلاب متاثرہ غریب عوام میں سینکڑوں ٹن امدادی سامان تقسیم کیا گیا ہے۔ شاہ سلمان مرکز برائے امداد و انسانی خدمات (کے ایس ریلیف) کی جانب سے سندھ کے نادار گھرانوں میں امدادی سامان تقسیم کیا گیا ہے۔شاہ سلمان مرکزنے پانچ ہزار 166 پاکستانیوں میں 92 ٹن سے زائد خوراک اور آٹے کے تھیلے تقسیم کیے ہیں۔

سعودی خبر رساں ادارے ایس پی اے کے مطابق سندھ کے مختلف اضلاع میں امدادی سامان کی تقسیم جاری ہے، گزشتہ چند روز کے دوران عمرکوٹ اور سانگھڑ کے سیلاب متاثرین میں 92 ٹن 127 کلو گرام راشن کے تھیلے تقسیم کیے گئے۔ واضح رہے کہ چند روز قبل صوبہ سندھ میں کھانے اور روزمرہ استعمال کے امدادی راشن کے 7 ہزار پیکٹ جن کا مجموعی وزن 287 ٹن ہے،پاکستان میں تعینات سعودی سفیر نواف بن سعید المالکی نے ا سلام آباد میں ایک تقریب کے دوران کنگ سلمان ہیومنیٹری ایڈ اینڈ ریلیف سنٹر (کے ایس ریلیف) کی جانب سے یہ امدادی پیکج حوالے کیا۔

اس تقریب میں پاکستان نیشنل نیچرل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے نمائندے محمد ادریس محسود اور پاکستان میں کے ایس ریلیف سنٹر کے ڈائریکٹر ڈاکٹر خالد الثانی میں موجود تھے۔سعودی سفیر نواف المالکی نے بتایا ہے کہ یہ امدادی پیکج سعودی شاہ سلمان اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی ہدایت کے مطابق ہے۔یہ امداد شدید بارشوں ، سیلاب اور کورونا وائرس سے متاثرہ سندھ کے سات اضلاع میں 42 ہزار افراد میں امدادی راشن کے پیکٹ تقسیم کئے جائیں گے۔اس موقع پر محمد ادریس محسود نے پاکستانی حکومت اور عوام کی جانب سے سعودی عرب کی طرف سے مستقل حمایت اور ا مداد پر شاہ سلمان بن عبدالعزیز کا شکریہ ادا کیا۔