- الإعلانات -

صرف سبزیاں کھانا فالج کا خطرہ بڑھائے، تحقیق

کہا جاتا ہے کہ صرف سبزیاں کھانے کی عادت امراض قلب کا خطرہ کم کرتی ہے مگر اس کے نتیجے میں فالج کا امکان بہت زیادہ بڑھ سکتا ہے۔

یہ دعویٰ برطانیہ میں ہونے والی ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

جریدے دی بی ایم جے میں شائع تحقیق میں آکسفورڈ یونیورسٹی کے محققین نے لگ بھگ 50 ہزار مرد و خواتین کی غذائی عادات اور صحت کا جائزہ 18 برسوں تک لیا۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ اپنی غذا سے گوشت کو مکمل طور پر نکال کر سبزیوں تک محدود ہوجانے والے افراد میں امراض قلب کی شرح کم ہوگئی مگر فالج کی شرح گوشت کھانے والوں کے مقابلے میں زیادہ بڑھ گئی۔

درحقیقت صرف سبزیاں کھانے والے افراد میں برین ہیمرج (دماغی شریان پھٹنا) کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔

تاہم جو لوگ سرخ گوشت سے گریز مگر مچھلی کھانے کے عادی ہوتے ہیں ان مٰں امراض قلب کا خطرہ تو کم ہوتا ہے مگر فالج کا خطرہ نہٰں بڑھتا۔

تاہم محققین کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے مزید تحقیق کی ضرورت ہے کہ تاکہ دریافت کیا جاسکے کہ کونسی غذا صحت کے لیے زیادہ مفید ثابت ہوسکتی ہے۔

اس تحقیق میں اس خیال کو تقویت دی گئی کہ جسم میں کولیسٹرول کی سطح میں کمی جو کہ ویسے تو صحت کے لیے فائدہ مند ہے، مگر اس سے کسی طرح برین ہیمرج کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔

سبزیوں تک محدود ہونے کے نتیجے میں جسمانی کولیسٹرول لیول کم ہوتا ہے جو امراض قلب سے تحفظ فراہم کرتا ہے مگر ایسے افراد میں وٹامن بی 12، وٹامن ڈی اور امینو ایسڈز کی بھی کمی ہوجاتی ہے اور یہ تینوں عناصر بھی فالج کا خطرہ بڑھانے کا باعث بنتے ہیں۔

اس سے قبل 2016 میں آسٹریا کی ایک تحقیق میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ جسمانی طور پر زیادہ متحرک ہونے اور کم تمباکو نوشی کے باوجود خوراک میں سبزی کو ترجیح دینے والے افراد کم صحت مند ہوتے ہیں۔

تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ سبزی خور افراد کولیسٹرول اور سیچورٹیڈ فیٹ کا کم استعمال کرتے ہیں جس سے ان کے اندر کینسر، الرجیز اور ذہنی صحت کے مسائل جیسے ڈپریشن اور ذہنی تشویش وغیرہ کے خطرے میں اضافہ ہوجاتا ہے۔

اس تحقیق کے دوران آسٹریا میں ہونے والے ایک طبی سروے کے ڈیٹا کو استعمال کیا گیا جس میں لوگوں کی غذائی عادات سمیت گوشت پسند کرنے والے اور سبزی کھانے کے شوقین افراد کے طرز زندگی میں تبدیلوں کا جائزہ لیا گیا تھا۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ سبزی کھانے والے افراد کا جسمانی وزن کم ہوتا ہے مگر پھر بھی وہ جسمانی اور ذہنی صحت کے حوالے سے زیادہ بہتر نہیں ہوتے۔

محققین کا کہنا تھا کہ جو لوگ گوشت کم کھاتے ہیں ان کے اندر طبی شعور بھی زیادہ نہیں ہوتا جیسے ڈاکٹروں سے معائنہ کرانے سے گریز اور ویکسین وغیرہ سے دوری۔

ان کا کہنا تھا کہ تحقیق کا لب لباب یہ ہے کہ سبزی کو خوراک میں استعمال کرنے والے کم صحت مند ہوتے ہیں ، معیار زندگی بھی کم تر اور انہیں زیادہ طبی علاج کی ضرورت ہوتی ہے۔

محققین کے مطابق سبزی خور مخصوص بیماریوں کا زیادہ شکار ہوتےہیں جیسے دمہ، کینسر اور ذہنی امراض جبکہ گوشت پسند کرنے والوں میں ان کی شرح کم ہوتی ہے۔