- الإعلانات -

پاکستان کی تاریخی فتح، لارڈز کے میدان میں انگلینڈ کو 20 سال بعد شکست

لندن:  پہلے ٹیسٹ میں پاکستان نے انگلینڈ کو جیتنے کے لیے 283 کا ہدف دیا تھا۔ انگلینڈ کی پوری ٹیم 207 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی۔ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان لارڈز میں کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ میچ میں قومی بولروں کی شاندار گیند بازی نے میچ کا پانسا پلٹ دیا۔ پاکستانی ٹیم نے انگلینڈ کو ٹیسٹ میچ جیتنے کیلئے 283 کا بظاہر آسان ہدف دیا تھا جسے برطانوی کھلاڑی حاصل کرنے میں ناکام رہے۔ انگلینڈ کی پوری ٹیم 207 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی۔

انگلینڈ کی جانب سے کپتان ایلسٹر کک اور اے ڈی ہیلز نے اننگز کا آغاز کیا۔ تاہم پہلی اننگز میں 81 رنز بنانے والے کپتان کک صرف 8 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ راحت علی کے گیند پر سرفراز احمد نے ان کا کیچ لیا۔ اس کے بعد اے ڈی ہیلز 16 اور جوئے روٹ صرف 9 رنز بنا پائے۔ جے ایم ونس نے اچھی بلے بازی کی اور 42 رنز بنائے لیکن ان کی نصف سینچری کا خواب اس وقت چکنا چور ہو گیا جب وہاب ریاض کی گیند پر یونس خان نے ان کا خوبصورت کیچ لے کر انھیں آؤٹ کر دیا۔ اس کے بعد جی ایس بیلنس نے پراعتماد بلے بازی کا مظاہرہ کیا تاہم وہ 43 کے انفرادی سکور پر بولڈ ہو کر یاسر شاہ کی پہلی وکٹ بنے۔ اس تھوڑی ہی دیر بعد معین علی بھی دو رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ ان کی وکٹ بھی یاسر شاہ کے حصے میں آئی۔ وکٹ کیپر بیئرسٹو نے ہمت دکھائی اور ٹیم کے سکور کو آگے بڑھایا تاہم ان کا سکور ابھی 48 تک پہنچا تھا کہ یاسر شاہ نے انھیں بھی بولڈ کر دیا۔